اسد عمر بھی ‘دوسروں کے کام پر سیاست چمکا’ رہے ہیں؟

اسد عمر بھی ‘دوسروں کے کام پر سیاست چمکا’ رہے ہیں؟

اپنے پروفیشنل کیریئر سے ریٹائرمنٹ لینے کے بعد میدان سیاست کا رخ کرنے اور اسلام آباد سے مسلسل دوسری بار ایم این اے بننے والے اسد عمر بھی ‘تختیاں لگانے والے سیاستدانوں’ کی فہرست کا حصہ بن گئے ہیں۔

روایتی طرز سیاست اور سڑک و گٹر جیسے ترقیاتی کاموں کے لیے فنڈز وغیرہ کو ایم این ایز، ایم پی ایز کے لیے رشوت قرار دینے والی تحریک انصاف کے رہنما اور وفاقی وزیر پر الزام ہے کہ انہوں نے اہل محلہ کی اپنی مدد آپ کے تحت بنوائی گئی سڑک پر اپنے نام کی تختی لگوا لی۔

یہ بھی پڑھیں: ایک پی ٹی آئی وزیر کارکردگی پوچھنے پر جھنجھلا گئے، دوسرے کو انڈا پڑ گیا

اسلام آباد کی یونین کونسل 44 کے علاقے ایچ 13 میں کشمیر ہائی وے سے عبداللہ گارڈن نامی منصوبے تک سڑک کی تعمیر و مرمت کا کام مقامی افراد نے چندہ جمع کر کے خود کرایا۔ تقریبا دو ماہ تک جاری رہنے والے کام کے بعد سڑک بن کر مکمل ہوئی تو سوشل میڈیا صارف احمد اسامہ طاہر کے مطابق پی ٹی آئی کے وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی و خصوصی اقدامات کے نام کی تختی لگا دی گئی۔

مقامی افراد کی جانب سے بنائی گئی سڑک پر فورا تختی لگانے والے اسد عمر کو پی ٹی آئی کا آئن اسٹائن قرار دیتے ہوئے احمد اسامہ طاہر نے موقف اپنایا کہ چھ برسوں سے رکن اسمبلی رہنے والے اسد عمر اس عرصے میں شاید چھ بار بھی حلقے میں نظر نہیں آئے ہوں گے۔

اہل محلہ کی جانب سے اپنی مدد آپ کے تحت بنائی گئی سڑک پر تختی لگانے کے بعد اسد عمر تنقید کی زد میں
اہل محلہ کی جانب سے اپنی مدد آپ کے تحت بنائی گئی سڑک پر تختی لگانے کے بعد اسد عمر تنقید کی زد میں

اپنی تفصیلی پوسٹ میں شکایت کنندہ لکھتے ہیں کہ ہم نے دو برس تک سی ڈی اے، میئر، ارکان اسمبلی اور وزراء کو کہنے کے باوجود شنوائی نہ ہونے پر اپنی مدد آپ کے تحت مکمل کی اس پر بورڈ لگا دیا گیا۔

مزید پڑھیں: عمران خان کی ٹیم کا ‘سب سے نایاب ہیرا’ کون؟

احمد اسامہ طاہر نے لکھا کہ ”مجھے موصوف سے بس اتنا پوچھنا ہے کہ سرکار آپ تب کہاں تھے جب رہائیشی در در کی دھول چاٹ رہے تھے۔ آپ ہی نے وعدہ کیا تھا شائد کمپین کے جلسے میں الیکشن 2018 سے 12-13 ایام پہلے۔ UC 44 میں کارنر میٹنگ میں کہ اگر ان کی حکومت آئی تو 100 دنوں میں روڈ

ھی بنے گی، بجلی اور گیس کے میٹر بھی بحال ہوں گے۔لیکن۔۔۔۔۔ چلیں وہ تو دور کی بات ہے 2 ماہ قبل کہاں تھے جب عوام سڑک بنا رہی تھی تو تب ہی توفیق ہو جاتی ۔۔۔۔”۔

انہوں نے سوال کیا کہ ‘عوام کی محنت اور وسائل سے تعمیر کی گئی سڑک پر اپنی تختی لگانا کیا مناسب ہے؟؟’۔

پاکستان ٹرائب کا یوٹیوب چینل سبسکرائب کریں

اسد عمر کی جانب سے ‘دوسروں کے کام پر اپنی تختی لگانے ‘ کے واقعہ کی اطلاع سوشل میڈیا پر آنے کے بعد مختلف صارفین نے اس پر اپنا ردعمل دیتے ہوئے وفاقی وزیر کے اس رویے کے متعلق سخت نابسندیدگی کا اظہار بھی کیا۔ امتل مصطفی نامی صارف نے لکھا کہ یہ صرف دوسروں پر تنقید کر سکتے ہیں۔ جب کہ حمزہ بن طاہر نے انہیں بے شرم قرار دیتے ہوئے لکھا کہ دوسروں کے کیے گئے کام پر اپنی سیاست کو کس طرح سے چمکایا جا رہا ہے۔

پاکستان ٹرائب کی خبریں/ویڈیوز/بلاگز حاصل کرنے کے لیے واٹس ایپ پر ہمارے ساتھ شامل ہوں

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔