انسداد پولیو مہم کے مخالف پاکستانی سوشل میڈیا اکاؤنٹس بند

انسداد پولیو مہم کے مخالف پاکستانی سوشل میڈیا اکاؤنٹس بند

اسلام آباد: پاکستان میں انسداد پولیو مہم کے مخالف سوشل میڈیا اکاؤنٹس کے خلاف بڑی کارروائی کرتے ہوئے درجنوں اکاؤنٹس بند کر دیے گئے ہیں۔

وزیراعظم کے انسداد پولیو مہم کے معاون خصوصی بابر بن عطا کا کہنا ہے کہ یوٹیوب اور فیس بک سے بڑی تعداد میں پولیو مخالف مواد ہٹا دیا گیا ہے۔ انہوں نے دعوی کیا کہ ٹوئٹر سے بھی بڑی تعداد میں پولیو مخالف ٹوئٹس ختم کی گئی ہیں۔

پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) نے وزیراعظم کے معاون خصوصی بابر بن عطا کو تحریر کیے گئے مراسلے میں سوشل میڈیا اکاؤنٹس بند کیے جانے کی تصدیق کی ہے۔ جس کے مطابق مجموعی طور پر 174 سوشل میڈیا اکاؤنٹس بند کیے گئے ہیں، ان میں فیس بک کے 130، ٹوئٹر کے 14 اور یوٹیوب کے 30 اکاؤنٹس شامل ہیں۔

انٹرنیٹ پر انسداد پولیو مہم پر اعتراض کرنے والوں کے خلاف کارروائی کا ذکر کرتے ہوئے بابر بن عطا نے کہا کہ یوٹیوب پر پولیو مخالف مواد پھیلانے والوں کو وارننگ جاری کی گئی ہے۔

ایک ٹوئٹ میں فیس بک کا شکریہ ادا کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کارروائی میں تیزی فیس بک اعلیٰ حکام کے ساتھ طویل ویڈیو کانفرنس کے بعد عمل میں لائی گئی ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق گذشتہ ہفتے پاکستان نے فیس بک پر زور دیا تھا کہ وہ سوشل میڈیا پر پولیو مخالف پروپیگنڈا کرنے والوں کے خلاف کارروائی کرے، حکومت کا کہنا تھا کہ پروپیگینڈا کی وجہ سے پولیو مہم متاثر ہورہی ہے۔

حکومتی اداروں کا موقف ہے کہ گزشتہ چند ماہ سے ملک میں انسداد پولیو مہم کے حوالے سے جعلی خبریں اور رپورٹس پھیلائی جارہی تھیں، جن میں انسداد پولیو مہم کی وجہ سے بچوں کے بیمار اور ہلاک ہونے کی خبریں شامل ہیں۔ ان اطلاعات کے سامنے آنے کے بعد ملک میں متعدد والدین نے اپنے بچوں کو انسداد پولیو ویکسین پلانے سے انکار کردیا تھا۔

انسداد پولیو مہم کے خلاف حالیہ تبصروں اور متعدد پولیو ٹیموں پر فائرنگ وغیرہ کے واقعات کے بعد ملک بھر میں مہم کو روک دیا گیا تھا۔

گذشتہ ماہ انسداد پولیو مہم کے دوران 3 افراد کو ہلاک کردیا گیا تھا، جن میں 2 پولیس اہلکار اور ایک خاتون رضا کار شامل تھی۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *