عمران خان کے سٹیزن پورٹل پر شکایت درج کرانے والے کی جان کو خطرہ

عمران خان کے سٹیزن پورٹل پر شکایت درج کرانے والے کی جان کو خطرہ

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کی حکومت کی جانب سے شہریوں کی شکایات کے ازالہ کے لیے قائم کردہ سٹیزن پورٹیل پر شکایت درج کرانے والے نوجوان کا کہنا ہے کہ اس کی زندگی شدید خطرہ میں ہے۔

عمران اقبال نامی شہری نے اپنی زندگی کو لاحق خطرہ کی نشاندہی ایک ویڈیو پیغام میں کی ہے۔

عمران اقبال کا کہنا ہے کہ ساہیوال کی تحصیل چیچہ وطنی کے علاقہ کسووال کے رہائشی کا کہنا ہے کہ انہوں نے 28 اکتوبر 2018 کو پاکستان سٹیزن پورٹل استعمال کرتے ہوئے سرکاری سرزمین پر واقع غیر قانونی مارکیٹ کے متعلق شکایت درج کرائی تھی۔ اس سے حکومت کو کروڑوں روپے کا فائدہ ہوا تھا۔

انہوں نے کہا کہ 4 نومبر 2018 کو ایک حکومتی شخصیت نے مارکیٹ کا دورہ کیا جہاں میری شناخت ظاہر کر دی۔ اس کے بعد سے ناصرف میرے کاروبار کو خطرہ ہے بلکہ بااثر افراد کی جانب سے میری زندگی کو بھی خطرہ ہے۔

عمران اقبال کا کہنا تھا کہ ضلع کونسل کے نمائندہ کی جانب سے میری شناخت ظاہر کرنے کے علاوہ مارکیٹ پر قبضہ کے ذمہ دار بااثر افراد کی پشت پناہی بھی کی جا رہی ہے۔ نوجوان کا کہنا تھا کہ ضلع کونسل کا نمائندہ بھی غیر قانونی مارکیٹ کی خریدوفروخت میں ملوث ہے۔

یہ بھی دیکھیں: پاکستان میں‌پارلیمانی کی جگہ صدارتی نظام رائج کرنے کی گونج

تحفظ کی اپیل کرنے والے نوجوان کا کہنا ہے کہ شناخت سامنے آنے کے بعد وہ درجنوں مرتبہ ڈپٹی کشمنر کے دفتر جا چکا ہے، دو مرتبہ ڈسٹرکٹ پولیس افسر سے بھی رابطہ کیا ہے۔

عمران اقبال کا کہنا تھا کہ کئی مرتبہ سرکاری شخصیات نے مارکیٹ کا وزٹ کر کے مجھے تحفظ کی یقین دہانی کرائی ہے لیکن بااثر افراد کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی جا رہی۔

عمران اقبال کا کہنا تھا کہ علاقہ میں ایک ہی مارکیٹ ہے جو ضلع کونسل کی ملکیت ہے، لوگوں نے اسے چند سو روپے ماہانہ کرایہ پر لے کر بھاری نرخوں پر دوسروں کو دے رکھا ہے۔

وزیراعظم سے تحفظ فراہم کرنے کی اپیل کرنے والے نوجوان کا کہنا ہے کہ اب اس کے پاس علاقہ چھوڑنے کے علاوہ کوئی چارہ کار نہیں رہا۔

عمران اقبال کی ویڈیو ٹویٹر پر شیئر کرنے والے ہینڈل نے لکھا ہے کہ “دوستو میری جان کو شدید خطرہ ہے۔ آپ سب سے گزارش ہے کہ میری ویڈیو شئیر کریں اور میری آواز وزیر اعظم تک پہنچائیں۔

پاکستان سٹیزن پورٹل نامی ایپلیکیشن لانچ کرتے ہوئے حکومت کا کہنا تھا کہ اس کے ذریعہ سرکاری اداروں اور منتخب نمائندوں سے متعلق شکایات براہ راست وزیراعظم تک پہنچ سکیں گی جن کے فوری ازالہ کے لیے کارروائی کی جایا کرے گی۔

Nazesh Hassan