حفاظ قرآن شوگر، بلڈ پریشر اور ڈپریشن سے محفوظ، تحقیق

حفاظ قرآن شوگر، بلڈ پریشر اور ڈپریشن سے محفوظ، تحقیق

ریاض: رہتی دنیا تک کے لیے ہدایت کا ذریعہ بنا کر مبعوث کیے گئے نبی آخر الزماں صلی اللہ علیہ وسلیم پر نازل کردہ قرآن عظیم الشان کی برکتیں اور معجزات بے شمار ہیں۔ ایک حالیہ تحقیق نے اللہ رب العزت کی جانب سے انسانوں کے لیے نازل کردہ آخری کتاب کو اپنے سینوں میں محفوظ کرنے والوں پر طبی انعامات کا جائزہ لیا ہے۔

سعودی عرب کے مشرقی صوبے القصیم میں قائم یونیورسٹی کے میڈیکل ڈیپارٹمنٹ کی تحقیق میں یہ نتیجہ اخذ کیا گیا ہے کہ حفظ قرآن کا اعزاز پانے والےا فراد ذہنی طور پر دیگر افراد سے ذیادہ طاقتور ہوتے ہیں۔

اس تحقیق میں کہا گیا ہے کہ 81 فیصد حفاظ کو شوگر ، بلند فشار خون ( بلڈ پریشر) کے علاوہ ڈپریشن کا مرض لاحق نہیں ہوتا۔

قصیم یونیورسٹی کے ڈاکٹروں کی ٹیم نے کافی عرصے تک متعدد افراد کا جائزہ لیا۔

محقیقین کا کہنا ہے کہ قرآن کا تھوڑا حصہ حفظ کرنے والوں کا جائزہ لیا گیا جس سے واضح ہوا کہ جن افراد نے کم از کم 10 سپارے حفظ کر رکھے ہیں وہ دیگر افراد کی نسبت خطرناک بیماریوں کا کم شکار ہوتے ہیں۔

سعودی یونیورسٹی کی تحقیق کے مطابق قرآن کی چند سورتیں حفظ کرنے والوں کی نسبت دس سپارے حفظ کرنے والوں میں ڈپریشن 81 فیصد، شوگر 71 فیصد اور بلڈ پریشر کا مرض 64 فیصد کم پایا جاتا ہے۔

قصیم یونیورسٹی کی تحقیقی ٹیم نے سعودی علاقے بریدہ کی مساجد سے ایسے افراد کا انتخاب کیا تھا جن کی عمر55 برس اور اس سے زائد تھیں۔ عام طبی تحقیق کے مطابق اس عمر کے افراد میں شوگر، بلند فشار خون اور ڈپریشن کی علامتیں ذیادہ پائی جاتی ہیں۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *