نئے پاکستان کا سیاسی فریب – عبدالقیوم کنڈی

نئے پاکستان کا سیاسی فریب – عبدالقیوم کنڈی

عمران خان کے وہ سیاسی فیصلے جنہیں عام طور پر ہم یو ٹرن کہتے ہیں دراصل سیاسی فریب کے سوا کچھ نہیں جن کا بنیادی مقصد ہر حال میں وزیراعظم بننا تھا- مشرف کے ریفرنڈم کی حمایت، پینتیس پنکچر، چار حلقے اور پاناما کاغذات وہ چند سیاسی فریب ہیں جن پر عمران خان کی تمام سیاسی عمارت کھڑی ہے۔ ان میں سے کوئی ایک بھی حقیقی ثابت نہیں ہوا اور یہ تمام فرضی کہانیاں ثابت ہوئیں۔

اگر لوگوں کا خیال یہ تھا کے حکومت ملنے کے بعد عمران خان ان کیلئے کچھ کریں گے تو ان تمام لوگوں کو اب تک مہنگائی، بے روزگاری، سیاسی گالم گلوچ، اور قرضوں میں بے پناہ اضافے کے علاوہ کچھ نہیں ملا- ہندوستان سے جنگی صورتحال کا فائدہ صرف مودی صاحب نے نہیں اٹھایا- تیسرے امپائر اور ان کے لاڈلے وزیراعظم نے بھی اسے خوب استعمال کیا اور اس جنگی دھند کو استعمال کرتے ہوئے عوام کی توجہ اہم مسائل اور حکومتی ناکامی سے دور ہٹائی۔

اب عمران خان لوگوں کو ایک اور سیاسی فریب دینا چاہتے ہیں- جمعہ کے دن ایک بیان میں انہوں نے کہا کے جلد ہی تیل اور گیس کے بہت بڑے ذخائر ملنے والے ہیں جن سے قوم کی حالت بدل جائے گی- مگر کوئی ان سے یہ پوچھے کے کتنے تیل سے مالامال ملک ہیں جن کے عوام کی حالت اس وجہ سے بدلی ہے- عمران خان آپ کو یہ نہیں بتائیں گے- مگر حقیقت یہ ہے کے زیادہ تر تیل سے مالامال ملکوں کے عوام کسماپرسی، غربت اور کرپشن کا شکار ہیں- وینزویلا، عراق، نائجیریا، الجیریا، برازیل، انڈونیشیا اور لیبیا وہ چند مثالیں ہیں جہاں بےتحاشا تیل اور گیس کے ذخائر بھی عوام کی حالت نہیں بدل سکے- جب کے ساری دولت ان ملکوں کے امراء نے لوٹ لی۔ حقیت یہ ہے کے قوموں کی ترقی اور عوام کی فلاح نئی ایجادات، اچھی حکومت، بااختیار عوام، معاشرے میں خواتین کی فعال شرکت، اور جدید عام تعلیم کے بغیر ناممکن ہے۔ زیادہ تر ترقی یافتہ ممالک وہ ہیں جن کے پاس تیل نہیں ہے مگر باقی خصوصیات جو اوپر درج کی گئی ہیں موجود ہیں-

عمران خان اور ان کی حکومتی قابلیت کا یہ حال ہے کہ ایک پشاور بی آر ٹی پروجیکٹ مکمل نہیں کر سکے اور اب تک بے تحاشہ پیسہ پانی کی طرح بہا چکے ہیں جس کا فائدہ جند لوگوں کو تو ہوا ہے مگر عوام کے ہاتھ کچھ نہیں آیا- صرف یہ ہی نہیں ایک اخباری رپورٹ نے یہ بھی آشکار کیا ہے کے کئی کروڑ روپے ان بچوں کے نام خرچ کئے گئے جن کا وجود صرف کاغذات میں ہے- یعنی عمران خان کی ایماندار ٹیم اتنی بھوکی ہے کہ بچوں کے تعلیم کے پیسے بھی نہیں چھوڑے اور دعوے یہ ہیں کے ملک بدلیں گے۔

اللہ کرے کے بے انتہاء تیل اور گیس پاکستان میں نکلے مگر اس کا فائدہ عوام کو جب پہنچے گا جب یہاں عوامی حکومت ہو گی- عمران خان عوامی نہیں بلکے امراء کو فائدہ پہنچانے والے وزیراعظم ہیں اور پچھلے آٹھ مہینوں میں وہ ان لوگوں کو کئی سو ارب کا فائدہ پہنچا چکے ہیں اور تیل کی دولت بھی خان کے انہی امیر دوستوں کو اور زیادہ امیر بنائے گی جبکہ عوام کیلئے صرف عمران خان کے جھوٹے وعدے اور سیاسی فریب ہی ہیں۔

پاکستان کا موجودہ عمرانی معاہدہ بری طرح ناکام ہو چکا ہے اب ایک نئے عمرانی معاہدے کی ضرورت ہے جو عوامی تحریک کے ذریعہ وجود میں آئے گا۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

فی الوقت ای کھوکھا مصنوعات کی ڈیلیوری صرف اسلام آباد میں دی جا رہی ہے۔ Dismiss