تحریک انصاف حکومت نے عوام پر گیس بم گرا دیا

تحریک انصاف حکومت نے عوام پر گیس بم گرا دیا

اسلام آباد: تحریک انصاف کی حکومت نے عوام پر گیس بم گراتے ہوئے گھریلو استعمال کی گیس کی قیمتوں میں اضافہ کر دیا ہے۔

وزیر خزانہ اسد عمر کی زیر صدارت کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس ہوا جس نے گیس قیمتوں میں اضافہ کا فیصلہ کیا ہے۔

گیس قیمتوں سے عام افراد پر بوجھ پڑنا تسلیم کرتے ہوئے وزیرخزانہ کا کہنا ہے کہ غریب صارفین پر کم از کم بوجھ ڈالا گیا ہے۔

اقتصادی رابطہ کمیٹی کے فیصلہ کے تحت گیس کے نرخ مقرر کرنے کے لیے بنائے گئے سلیب کی قیمتوں میں بھی اضافہ کیا گیا ہے۔

ایل پی جی کی قیمت میں کمی کے دعوی کے ساتھ گیس درآمد کرنے کی اجازت بھی دی گئی ہے۔ اس کے ساتھ ہی ایل پی جی کی درآمد پر ٹیکس کم کر کے 10 فیصد کر دیا گیا ہے۔ حکام کا دعوی ہے کہ اس تبدیلی کے نتیجے میں  ایل پی جی کے سلنڈر کی قیمت 1600 سے کم ہو کر 1400 روپے ہو گئی ہے۔

ای سی سی کے فیصلوں کے متعلق گفتگو کرتے ہوئے اسد عمر کا کہنا تھا کہ امیر طبقات کے لیے گیس کی قیمتوں میں زیادہ اضافہ کیا گیا ہے۔

 وزیرخزانہ اسد عمر اسلام آباد میں ہونے والے کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کر رہے ہیں۔

وزیرخزانہ اسد عمر اسلام آباد میں ہونے والے کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کر رہے ہیں۔

حکومتی اعدادوشمار کے مطابق پاکستان بھر کی 23 فیصد آبادی سوئی گیس استعمال کرتی ہے جب کہ 60 فیصد آبادی ایل پی جی گیس استعمال کرتی ہے۔

ای سی سی کے فیصلہ کے مطابق 50 کیوبک میٹر گیس ماہانہ استعمال کرنے والے صارفین کے لیے قیمتوں میں 10 فیصد اضافہ کیا گیا ہے جب کہ 100 کیوبک میٹر استعمال کرنے والے صارفین کے لیے قیمت میں 15 فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔

سلیب کی قیمتوں میں تبدیلی کے تحت 200 کیوبک میٹر استعمال کرنے والے صارفین کے لیے 19 فیصد اور 500 کیوبک میٹر سے کم استعمال کرنے والے صارفین کرنے والے صارفین کے لیے قیمتوں میں 140 فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *