مضر صحت پانی پاکستانیوں کے لیے دہشتگردی سے بڑا خطرہ | pakistantribe.com/urdu

مضر صحت پانی پاکستانیوں کے لیے دہشتگردی سے بڑا خطرہ

کراچی: ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ مضرصحت پانی پاکستانیوں کے لیے دہشتگردی سے زیادہ ہلاکت خیز ثابت ہورہا ہے۔
اقوام متحدہ کے مطابق پاکستان میں مضرصحت پانی کے استعمال سے پیدا ہونے والی بیماریاں ہر برس 40 فیصد اموات کا باعث بن رہی ہیں۔
رپورٹس میں‌پیش کردہ اعدادوشمار سے ظاہر ہوتا ہے کہ گندہ پانی اس وقت پاکستانیوں کے لیے قدرتی آفات اور دہشتگردی سے بڑا خطرہ ہے۔
کئی سالوں سے صنعتوں کا کیمیائی فضلہ، ناقص سیوریج سسٹم، زراعت میں کمی اور منصوبہ بندی کے بغیر شہروں کی آبادی نے پانی کا معیار گرادیا ہے ۔ اس تبدیلی کا سب سے زیادہ اثر بڑے شہروں پر پڑ رہا ہے۔
رپورٹ کے مطابق مضر صحت پانی سے لاکھوں افراد متاثر ہو رہے ہیں جبکہ ملک کے بیشتر حصوں میں لوگوں کو پینے کے پانی کے لیے میلوں دور تک جانا پڑتا ہے۔
بڑے شہروں میں عوام کی بڑی تعداد منرل واٹر خرید کر پینے پر مجبور ہے۔
ماضی میں سامنے آنے والی ایک رپورٹ میں یہ بھی بتایا جا چکا ہے کہ کل آبادی کا محض 36 فیصد ہی صاف پانی تک رسائی رکھتا ہے۔ شہری علاقوں کے 41 فیصد جب تک دیہی علاقوں میں 32 فیصد افراد کو پینے کے لئے محفوظ پانی دستیاب ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں