دنیا کا گرم ترین صحرا برف سے ڈھک گیا

دنیا کا گرم ترین صحرا برف سے ڈھک گیا

افریقا: کرہ ارض کے سب سے گرم اور تیسرا بڑا صحرائی علاقہ صحارا رواں ہفتے برف باری کے نظاروں سے جگمگا اٹھا۔

مقامی میڈیا کے مطابق شمالی الجزائر کے صحرائی علاقے عین الصفراء کےکچھ حصوں میں ایک فٹ سے زائد برفباری ہوئی جس نے گرم ترین تپتی مٹی کو برف سے ڈھک دیا۔
مبصرین اسے ماحولیاتی تبدیلیوں کا ایک اور حیران کرنے دینے والا نظارہ قرار دے رہے ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق صحرائے صحارا میں اس سے قبل بھی 3 مرتبہ برف باری ہوچکی ہے۔
1979 سے 2017 کے درمیان یہ چوتھا موقع ہے جب برف نے صحرائے صحارا کے کچھ حصوں کو سفید چادر سے ڈھک دیا ہے۔
سیاحوں کی نظر میں یہ منظر ایسا محسوس ہوتا ہے کہ جیسے کسی نے صحرا کی گرم اور خشک مٹی کو برف کا کمبل اوڑھا دیا ہو۔

مقامی میڑولوجسٹ جاسن نیکہول کے مطابق عین الصفراء میں 2012 سے قبل 1979 میں برف فباری ہوئی تھی۔
انہوں نے مزید بتایا کہ جنوری 2012 کے بعد دسمبر 2016 اورجنوری 2017 میں بھی صحرائے صحارا کے کچھ حصوں میں برفباری ہوئی تھی۔

مقامی محکمہ موسمیات کے مطابق رواں برس صحرائے صحارا میں 15 انچ تک برف پڑی، جس نے صحرائے صحارا کو کچھ دیر کے لیےمزید دلکش بنا دیا۔

واضح رہے صحرائے صحارا دنیا کا تیسرا بڑا اور گرم ترین صحرا ہے۔ 35 لاکھ مربع میل رقبے کے ساتھ یہ صحرا امریکا یا چین کے برابر بتایا جاتاہے۔

صحرائے صحارا کا بیشتر حصہ شمالی افریقا میں واقع ہے ۔ اس کے جنوب میں دریائے نائجر ، مصراور بحیرہ روم، مشرق میں بحیرہ احمر، مغرب میں بحراوقیانوس اور شمال میں کوہ اطلس واقع ہیں۔

صحرائے صحارا کو مختلف حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے جن میں کوہ ہقار، کوہ تبستی، کوہ ایئر، صحرائے تنیر شامل ہیں،جس کی بلندی 3415 میٹر ہے اور یہ شمالی چاڈ میں کوہ تبستی کے سلسلے میں واقع ہے۔

یہاں کی آبادی 25 لاکھ ہے جن میں سے اکثریت کا تعلق مصر،ماریطانیہ اور مراکش سے ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *