ٹرمپ کا میڈیکل چیک اپ، دماغی معائنہ نہیں ہو گا

ٹرمپ کا میڈیکل چیک اپ، دماغی معائنہ نہیں ہو گا

واشنگٹن:  امریکی صدارتی ترجمان نے تصدیق کی ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کا میڈیکل چیک اپ جمعہ کو ہو گا جس میں دماغی معائنہ شامل نہیں ہے۔

پیر کو سامنے آنے والی رپورٹ میں وائٹ ہاؤس کے نائب پریس سیکریٹری ہوگن گڈلے کا کہنا تھا کہ امریکی صدر ٹرمپ کا سالانہ میڈیکل چیک اپ جمعے کو ہوگا۔

امریکی اخبار سے گفتگو میں ترجمان وائٹ ہاؤس کا کہنا تھا کہ میڈیا میں صدر ٹرمپ کا دماغی توازن ٹھیک نہ ہونے سے متعلق پروپیگنڈا کیا گیا لیکن صدر ذہین اور فوری فیصلہ سازی کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

اپنی انتہاپسندانہ پالیسیوں اور جارح اقدامات کی وجہ سے متنازع بن جانے والے امریکی صدر ٹرمپ کا طبی معائنہ والٹر ریڈ نیشنل ملٹری میڈیکل سینٹر میں جمعے کوہوگا۔

ہوگن گڈلے کاکہنا ہے کہ میڈیا ٹرمپ کی ذہنی کیفیت کو منفی طور پر بڑھا چڑھا کے پیش کررہا ہے لیکن حقیقت میں ایسا نہیں ہے۔

انہوں نے بتایا کہ صدر ٹرمپ سیاست کے ساتھ ساتھ دیگر شعبوں میں بھی کافی مہارت رکھتے ہیں۔

امریکی عہدیدار نے ماہرین نفسیات پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ جو ڈاکٹرز صدر ٹرمپ کی ذہنی کیفیت سے آگاہ نہیں اور نہ کبھی ان سے ملے انہیں ایسے بیانات سے گریز کرنا چاہیے۔

چند روز قبل مائیکل وولف نامی امریکی مصنف نے اپنی نئی کتاب فاسٹ اینڈ فیوری،انسائیڈ دی ٹرمپ ہاؤس میں صدر ٹرمپ کی ذہنی صحت کو مشکوک قرار دیا تھا۔

ٹرمپ کے حامیوں کا خیال ہے کہ امریکی صدر کی پہلی میڈیکل رپورٹ ان کی دماغی صحت کے متعلق ساری افواہوں کو ختم کر سکے گی۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *