پاکستانی موبائل فون صارفین کے اضافے میں ٹھہرائو، موبائل انٹرنیٹ صارفین کے نئے اعدادوشمار

پاکستانی موبائل فون صارفین کے اضافے میں ٹھہرائو، موبائل انٹرنیٹ صارفین کے نئے اعدادوشمار

اسلام آباد: پاکستانی موبائل فون صارفین میں جولائی کے مہینے میں ہوئے سب سے کم اضافے کو دیکھ کر محسوس ہوتا ہے کہ ان میں ٹھہرائو آگیا ہے جب کہ تھری جی موبائل انٹرنیٹ کی نسبت فور جی موبائل انٹرنیٹ صارفین کی تعداد میں زیادہ اضافہ ہوا ہے۔

پاکستان ٹرائب ٹیکنالوجی ڈیسک کے مطابق  جولائی 2017 کے دوران پاکستانی موبائل فون صارفین میں صرف 24 ہزار کا اضافہ ہوا جب کہ خدمات فراہم کرنے والے چار میں سے تین موبائل فون آپریٹرز نے منفی گروتھ ظاہر کی۔

پاکستان ٹیلی کیمونیکیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) کے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق جولائی کے مہینے میں پاکستانی موبائل فون صارفین میں صرف 23638 موبائل فون کنکشنز کا اضافہ ہوا۔

پی ٹی اے کے اعدادوشمار بتاتے ہیں کہ گزشتہ مالی سال کے ہر مہینے میں اوسطا 5 لاکھ موبائل صارفین کے اضافے کی نسبت یہ تعداد انتہائی کم ہے۔ مالی سال 2015-16 میں موبائل فون کنکشنز حاصل کرنے والوں کی ماہانہ اوسط تعداد پندرہ لاکھ تھی۔

پاکستانی موبائل صارفین میں اضافے کے بجائے ٹھہرائو کیوں؟

ٹیلی کام ماہرین کا کہنا ہے کہ نئے صارفین میں اضافہ رک جانے یا بہت کم ہو کر ٹھہرائو کی ممکنہ وجہ یہ بھی ہو سکتی ہے جس کے تحت اگر کوئی سم 90 روز تک فعال نہ رہے تو خود ہی ڈی ایکٹو ہو جاتا ہے۔

پاکستانی ٹیلی کام انڈسٹری کے معاملات سے آگاہ حلقوں کا کہنا ہے کہ پہلی بار موبائل فون صارفین کی تعداد میں اضافہ ایک ایسے مرحلے پر پہنچا ہے جہاں محسوس ہوتا ہے کہ افزائش میں ٹھہرائو آ گیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں: انکم ٹیکس ریٹرن 2017 جمع کروانے والوں کیلئے رہنما ہدایات

پاکستانی موبائل فون صارفین کی اکثریت کے متعلق خیال کیا جاتا ہے کہ وہ ایک سے زائد موبائل سمز رکھتے ہیں۔ یہ بھی ایک ممکنہ وجہ ہو سکتی ہے کہ نئے سیل فون کنکشنز کی فروخت میں اتنی زیادہ کمی آئی ہے۔

ٹیلی کام صنعت کے اعدادوشمار اور پیشکشیں دیکھ کر واضح ہوتا ہے کہ اب پاکستانی موبائل فون کمپنیز نئی سمز فروخت کرنے کے بجائے وائس اور انٹرنیٹ پیکجز میں جدت لانے پر پوری توجہ دے رہی ہیں۔

ماہرین اضافے میں کمی کی رک جانے کی ایک وجہ موبائل فون کمپنیوں کی جانب سے نیم شہری اور دیہی علاقوں تک سروسز پہنچانے کے لئے سرمایہ کاری میں کمی لے آنے کو بھی اس کی اہم وجہ مانتے ہیں۔ ان ماہرین کا کہنا ہے کہ پاکستان کے شہری علاقوں میں موبائل فون کنکشنز کی فروخت میں ٹھہرائو آ چکا ہے تاہم نیم شہری اور دیہی علاقوں میں ابھی تک اضافے کی گنجائش موجود ہے۔

تھری جی موبائل انٹرنیٹ کی نسبت فور جی موبائل انٹرنیٹ صارفین کی تعداد میں زیادہ اضافہ
پاکستانی موبائل فون کنکشنز حاصل کرنے والوں کی تعدا دمیں ٹھہرائو سے قطع نظر جولائی کے مہینے میں فور جی انٹرنیٹ پر منتقل ہونے والوں کی تعداد خاصی زیادہ رہی۔

جولائی 2017 سے متعلق اعدادوشمار کے مطابق تھری جی کی نسبت فی الوقت دستیاب موبائل براڈ بینڈ کے تیز تر کنکشن فور جی پر منتقل ہونے والوں کی تعداد زیادہ رہی۔

پی ٹی اے کے مطابق 9 لاکھ 14 ہزار 23 موبائل فون صارفین نے جولائی میں موبائل انٹرنیٹ حاصل کیا۔ اس اضافے میں فور جی موبائل انٹرنیٹ کنکشن حاصل کرنے والوں کی تعداد 56 فیصد یعنی 5 لاکھ 10 ہزار 245 رہی جب کہ تھری جی موبائل انٹرنیٹ کنکشن استعمال کرنے والوں کی تعداد 44 فیصد یعنی 4 لاکھ 3 ہزار 778 رہی۔

یاد رہے کہ پاکستانی موبائل فون کمپنیوں کے فراہم کردہ اعدادوشمار کے مطابق پاکستانی موبائل صارفین اوسطا ماہانہ 212 روپے وائس سروسز کے لئے خرچ کرتے ہیں۔ جب کہ موبائل انٹرنیٹ استعمال کرنے والوں کے خرچ کی ماہانہ اوسط 1500 روپے ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

One thought on “پاکستانی موبائل فون صارفین کے اضافے میں ٹھہرائو، موبائل انٹرنیٹ صارفین کے نئے اعدادوشمار

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *