پاکستانی فوج امریکی دھمکیوں سے مرعوب نہیں ہوگی، عالمی میڈیا

پاکستانی فوج امریکی دھمکیوں سے مرعوب نہیں ہوگی، عالمی میڈیا

اسلام آباد: گزشتہ دنوں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے پاکستان کی امداد بند کئے جانے اور دھوکہ دہی کے الزامات کے حوالے سے کافی تنقید کی گئی تھی جس پر تمام دنیا سے ملا جلا ردعمل سامنے آیا،اس حوالے سے عالمی میڈیا نے بھی معاملے کا بغور جائزہ لیا اور اپنے خیالات کا اظہار کیا۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام ورلڈ دیسک کے مطابق عالمی میڈٰیا کی رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ امریکی صدر کی پاکستان کو دھمکیاں دینا سنگین اسٹریٹجک غلطی ہے۔

 

عالمی میڈیا کے مطابق پاکستان پر تنقید،ٹرمپ کی سنگین اسٹریٹجک غلطی ہےامریکی دھمکیوں سے پاکستانی فوج مرعوب نہیں ہوگی،اب چین پاکستان کی ڈھال بن چکا پاکستان امریکاکی ضرورت ہے۔

طالبان سے مصالحت، سپلائی کےلئے پاکستان کا تعاون ضروری ہے سولہ سالہ افغان جنگ کا کوئی خاتمہ نظر نہیں آرہا،مجموعی ہلاکتیں111442ہیں افغان جنگ ایک ٹریلین ڈالر ہڑپ کر گئی، پاکستان کے لئے جنگی طیاروں اور فوجی سازوسامان کا انحصاراب امریکا پر نہیں رہا امریکی صدر ٹرمپ کی پاکستان کو دھمکی کے نتائج منفی نکل سکتے ہیں۔

صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے جنوبی ایشیا سے متعلق امریکا کی نئی سکیورٹی پالیسی کے بنیادی خد و خال کی وضاحت کرتے ہوئے پاکستان کے خلاف سخت زبان استعمال کی ، اسلام آباد حکومت کو تنبیہ کرتے ہوئے کہا کہ واشنگٹن حکومت اب اس امر کو قطعاً برداشت نہیں کرے گی کہ پاکستان میں دہشت گرداپنی محفوظ پناہ گاہیں قائم رکھیں۔

دوسری طرف پاکستان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی تنقید کو ’مایوس کن‘ قرار دیا ہے۔

اسلام آباد حکام نے دہشت گرد تنظیموں سے تعاون کے امریکی الزامات کو بھی مسترد کیا۔

امریکی نشریاتی ادارے بلوم برگ کی رپورٹ کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی افغانستان کے سولہ سالہ تنازع کو تبدیل کرنے کی نئی حکمت عملی چین کی وجہ سے کمزور ہوسکتی ہے۔

ٹرمپ نے پاکستان پر کھلے عام دباو ڈالنے کی کوشش کی ہے ٹرمپ کے اعلان کے ایک دن بعد، امریکی وزیر خارجہ نے مزید کہا کہ پاکستان کو’ایک مختلف نقطہ نظر اختیار کرنا چاہیے‘ لیکن افغانستان کی حکمت عملی کے اس پہلو کا کوئی اثر اس لئے نہیں پڑے گا کہ چین کے پاکستان کے ساتھ قریبی معاشی تعلقات ہیں جس کی وجہ سے پاکستان کا امریکا پر انحصار کم ہو گیا ہے۔

چین کی طرف سے پاکستان میں پچاس ارب ڈالر سے زائد کی سرمایہ کاری کے منصوبے اور مضبوط سفارتی تعاون کی وجہ سے پاکستانی فوج امریکا کی ان دھمکیوں سے زیادہ فکر مند نہیں جس میں اس نے فوجی امداد میں اربوں ڈالر روکنے کی بات کی ہے۔

لندن کنگ کالج کے بین الاقوامی تعلقات کے پروفیسر ہار پینٹ کا کہنا ہے کہ چین اب پاکستان کی ڈھال ہے ،امریکا کی طرف سے پاکستان کی امداد میں کٹوتی کا خلا چین پر کردے گا۔

 

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *