نواز شریف کے عدلیہ مخالف بیانات نشرکرنے پر پابندی

نواز شریف کے عدلیہ مخالف بیانات نشرکرنے پر پابندی

لاہور: صوبہ پنجاب کے عدالت عالیہ یعنی ہائیکورٹ نے ملک میں الیکٹرانک میڈیا کے نگران ادارے پیمرا کو سابق وزیرا عظم میاں محمد نواز شریف کے عدلیہ مخالف بیانات اور تقاریر کی نشر و اشاعت روکنے کا حکم دیا ہے۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کے مطابق لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس مامون الرشید کا کہنا تھا کہ نواز شریف شریف کے عدلیہ مِخالف بیانات نشر اور شائع نہ کیے جائیں۔

جسٹس مامون الرشید نے پیمرا کو یہ حکم جوڈیشل ایکٹیوزم پینل کے چیئرمین چوہدری اظہر صدیق کی درخواست کی سماعت کے دوران سنایا.

عدالت نے پیمپرا کو حکم دیا کہ وہ نواز شریف، وزیر اعلیٰ شہباز شریف سمیت 16 وزارء کی عدلیہ مخالف تقاریر کی نشرواشاعت پر پابندی کو یقینی بنائے اور اس عدالتی حکم پر عملدرآمد کی رپورٹ بھی 12 ستمبر تک جمع کرائے۔

درخواست گزار کا کہنا تھا کہ سابق وزیر اعظم اپنی نااہلی کے بعد سے مسلسل عدلیہ مخالف تقاریر کررہے ہیں، وہ اپنی تقاریر کے ذریعے عوام کو بغاوت پر اکسانے کی کوشش کررہے ہیں اور اس وجہ سے عدالت نواز شریف کی میڈیا کوریج پر پابندی کا حکم جاری کردے۔

دریں اثناء عدالت نے ابتدائی سماعت مکمل ہونے کے بعد پیمرا اور دیگر فریقین کو نوٹس جاری کردیے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *