پنجاب کے تعلیمی اداروں میں سافٹ ڈرنکس پر پابندی

پنجاب کے تعلیمی اداروں میں سافٹ ڈرنکس پر پابندی

لاہور: محکمہ خوراک پنجاب نے 14 اگست کے بعد سے صوبے بھر کے تعلیمی اداروں میں سافٹ ڈرنکس کی فروخت پر پابندی عائد کرنے کا اعلان کیا ہے۔

پنجاب فورڈ اتھارٹی کے مطابق 14 اگست سے پنجاب بھر کے تعلیمی اداروں میں پیپسی، کوکاکولااور ڈیو سمیت تمام  اقسام کی سافٹ ڈرنکس کی فروخت پر پابندی ہو گی۔

محکمہ خوراک کے مطابق تعلیمی اداروں میں پابندی کے ساتھ ساتھ ان کے آس پاس 100 میٹر تک واقع کیفیز، کنٹینز اور دوکانوں میں بھی ٓ سافٹ ڈرنکس کی ترسیل اور فروخت پر سخت پابندی ہوگی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق  مضر صحت ہونے کے سبب دنیا بھر کے 120 ممالک میں سافٹ ڈرنکس کی فروخت اور ترسیل پر پابندی عائد ہے۔

اس ضمن میں محکمہ خوراک کے ڈائریکٹر جنرل نورالامین مینگل نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ تعلیمی اداروں میں سافٹ ڈرنکس کی فروخت کا مقصد طلباء کو مضر صحت اشیاء سے بچانا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ کئی ممالک میں سافٹ ڈرنکس کو ممنوعہ قراردیا گیا ہے جب کہ سعودی عرب اور امریکا نے اس پر 2006ء سے پابندی عائد کررکھی ہے۔

پنجاب فوڈ اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل نے مزید کہا کہ ہم نے 701 ٹیمیں تشکیل دی ہیں جو عائد شدہ پابندی کو یقینی بنائیں گے۔

Ahmed Hamidi

Ahmed Hamidi is a web producer at pakistantribe.com's news desk.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *