پی ٹی آئی وزیر کے حملے پرآئی جی خیبرپختونخوا کیوں خاموش رہے، گلالئی

پی ٹی آئی وزیر کے حملے پرآئی جی خیبرپختونخوا کیوں خاموش رہے، گلالئی

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کی منحرف رہنما اور رکن قومی اسمبلی عائشہ گلالئ نے کہاہے کہ  تحریک انصاف کے ایک وزیرنے مسلح جتھوں کے ساتھ میری بہن کے اسپتال پر حملہ کیا لیکن آئی جی خیبرپختونخوا خاموشی سے تماشہ دیکھتے رہے۔

ان کے بقول  صوبائی حکومت دعویٰ کرتی ہے کہ پولیس غیرجانبدار ہے لیکن اس واقعے سے ان کے دعووں کے قلعی کھل گئی ہے۔آجی پولیس جواب دیں کہ وہ کیوں خاموش رہے؟

وہ قومی اسمبلی کے باہر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کررہی تھیں۔

انہوں نے کہا کہ  جب تک میں پارٹی میں تھی تو سب ٹھیک تھا لیکن جب حق کی بات کی تو مجھ سمیت میرے گھر والوں کو انتقامی کارروائی کا نشانہ بنایاگیا ، میری قومی ہیرو او رغیرسیاسی بہن کو سیاست میں گھسیٹا گیا۔

عائشہ گلالئی کا کہناتھا کہ میں ان خواتین کی آواز بنی ہوں جن کا دفاتروں اور گھروں میں استحصال ہوتا ہے۔ ماؤں بہنوں کی عزتوں کو جس طرح یہاں اچھالا جاتا ہے ایسا دنیا میں کہیں نہیں ہوتا، میں نے کمزور خواتین کو پیغام دیا ہے کہ استحصال پر خاموش نہ رہیں۔

انہوں نے کہا کہ  جس ملک و قوم میں ماؤں بیٹیوں کی عزت اہم ایشونہ ہو اسے زوال سے کوئی نہیں بچا سکتا،  دنیا کے کسی مذہب کسی تہذیب میں گالی گلوچ کی تربیت نہیں دی لیکن پی ٹی آئی نے اپنے کارکنوں کو گالم گلوچ کا کلچر دیا، تحریک انصاف کے پارلیمنٹیرینز سے کہتی ہوں کہ یہ کلچر ان  کے ساتھ ساتھ کارکنوں پر بھی حملہ آور ہوگا اور کسی کو نہیں بخشے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ مجھے اپنے کردار پر فخر ہے ، غیرت اور عزت کے معاملے پر سمجھوتہ نہیں ہوسکتا، ان کا کہناتھا کہ عمران خان سرعام معافی مانگیں۔

قبل ازیں عائشہ گلالئی نے قومی اسمبلی میں بھی دھواں دھار خطاب بھی کیا اور تحریک انصاف کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔

اجلاس میں گلالئی نے بات کرنے کی اجازت مانگی تو پی ٹی آئی رہنما شیریں مزاری نے اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ گلالئی کو خود اخلاقیات کا مظاہرہ کرنا چاہیئے  تاہم ڈپٹی اسپیکر نے ان کا اعتراض مسترد کرتے ہوئے گلالئی کو بات کرنے کی اجازت دی۔

انہوں نے کہا کہ  پی ٹی آئی سے نکلتے ہی انتقامی کارروائی کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اور قتل اور تیزاب پھینکنے کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں  لیکن میں بتادوں کہ ہم کسی سے ڈرنے والے نہیں۔

ان کےخطاب کے دوران پی ٹی آئی اراکین (stranger) اسٹرینجر کے شدید نعرے لگاتے رہے تاہم انہوں نے شورشرابے کے باوجود اپنی تقریر مکمل کی۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *