نواز شریف کیخلاف ریفرنسز کے بعد قمرزمان چیئرمین نیب نہیں رہیں گے

نواز شریف کیخلاف ریفرنسز کے بعد قمرزمان چیئرمین نیب نہیں رہیں گے

اسلام آباد: میاں محمد نواز کے خلاف  ریفرنسز دائر کیے جانے کے تین ہفتوں بعد قمرزمان چوہدری چیئرمین نیب کی حیثیت سے اپنی چار سالہ مدت پوری نے کے بعد عہدے سے سبکدوش ہوں جائیں گے۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کے مطابق نواز شریف اور ان کے خاندان کے خلاف ریفرنسز دائر کیے جانے کے چند ہی روز بعد اسلام آباد اور راولپنڈی کی 6 میں سے 4 احتساب عدالتوں کے ججز کی مدت ملازمت بھی پوری ہو جائے گی۔

اس وقت باقی دو احتساب عدالتوں میں بھی کوئی جج موجود نہیں جب کہ راولپنڈی کی چار میں سے 2 عدالتوں کے پریزائیڈنگ افسران موجود نہیں ہیں۔

احتساب عدالت نمبر ایک کے سربراہ خالد محمود رانجھا کا تقرر27اپریل 2015کو ہوا تھا اور رواں برس4اکتوبر کو ریٹائر ہوجائیں گے۔

اسی طرح عدالت نمب 3کے سربراہ راجا اخلاق حسین کا تقرر14نومبر 2016کو عمل میں آیا تھا اور وہ بھی یکم اکتوبر کو اپنے عہدے سے سبکبدوش ہوجائیں گے۔

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی احتساب عدالت نمبر ایک کے جج محمد بشیر 13 مارچ 2015 کو عہدے پر فائز ہوئے تھے اور ان کی مدت ملازمت 12 مارچ 2018 ء کو پوری ہوجائے گی جب کہ عدالت نمبر دو کے سربراہ نثار بیگ رواں برس سولہ اکتوبر کو سبکدوش ہوجائیں گت۔

علاوہ ازیں راولپنڈٰی کی احتساب عدالت نمبر دو اور چار میں میں ججز کی اسامیاں خالی ہیں۔

 

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *