اسلام آباد کے سیکٹر I 17 کا اسٹیٹس بدل کر رہائشی کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد کے سیکٹر I 17 کا اسٹیٹس بدل کر رہائشی کرنے کا فیصلہ

 اسلام آباد کے سیکٹر اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت کے انتظام و انصرام کے ذمہ ادارے کیپیٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) نے فیصلہ کیا ہے کہ I 17 آئی سترہ کو رہائشی سیکٹر میں تبدیل کیا جائے گا۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کے مطابق سی ڈی اے کی جانب سے 2009 میں آئی سترہ کو صنعتی سیکٹر کے طور پر لانچ کر کے افتتاح کیا گیا تھا۔

صنعت کاروں کی جانب سے اس پیشکش کو مسترد کرنے کے بعد سی ڈی اے نے وزیراعظم ہائوس کو سمری ارسال کی تھی جس کے تحت مذکورہ سیکٹر کا اسٹیٹس تبدیل کیا جانا تھا۔

آئی سیون کا صنعتی سیکٹر بنانے کا اعلان اس وقت کیا گیا تھا جب یہ طے پایا تھا کہ صنعتوں کو موجودہ رہائشی علاقوں سے باہر منتقل کیا جائے۔ یہ فیصلہ سپریم کورٹ کے احکامات کی تعمیل کے تحت کیا گیا تھا۔

اس دوران 9 برس کا بڑا عرصہ گزر جانے کے باوجود نئے اسلام آباد ائیرپورٹ یعنی قائد اعظم انٹرنیشل ائیرپورٹ کی تعمیر اور صنعت کاروں کی جانب سے تسلیم نہ کئے جانے کے بعد مذکورہ سیکٹر پر ترقیاتی کام کا آغاز ہی نہیں کیا گیا۔

اس پس منظر میں ایک پار بھر سی ڈی اے نے منصوبہ بندی شروع کی ہے کہ آئی سیونٹین سیکٹر کا اسٹیٹس صنعتی سے رہائشی سیکٹر کردیا جائے۔
اس اقدام کی منصوبہ بندی اسلام آباد میں رہائش کے بڑھتے ہوئے رجحان کے پیش نظر کی گئی ہے۔

یاد رہے کہ پاکستانی دارالحکومت ہونے کے باوجود اسلام آباد کی موجودہ آبادی کے لئے بھی بنیادی ضروریات مثلا پانی، تعلیمی اداروں، درست سڑکوں، روشنی وغیرہ کا ضرورت بھر انتظام نہیں ہے۔ جس کے سبب یہاں کے مکینوں کی واضح اکثریت ٹینکر اور اسکول مافیا کے ہاتھوں یرغمال رہنے پر مجبور ہیں۔

اسلام آباد سے منتخب ہونے والے سابق رکن قومی اسمبلی میاں اسلم کا پانی کی قلت کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ یہ انتظامی نااہلی اور ترجیحات کا مسئلہ ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *