ایبٹ آباد میں اسکول کے ایڈمن آفیسر نے طلبہ پر کلاشنکوف سے گولیاں برسادیں

ایبٹ آباد میں اسکول کے ایڈمن آفیسر  نے طلبہ پر کلاشنکوف سے گولیاں برسادیں

ایبٹ آباد: پاکستان کے سیاحتی حوالوں سے معروف مقامات میں سے ایک ایبٹ آباد میں اسکول کے ایڈمن آفیسر کی جانب سے طلبہ پر کلاشنکوف سے فائرنگ کر دی گئی۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کو دستیاب معلومات کے مطابق اپنی نوعیت کا یہ افسوسناک واقعہ پاکستان انٹرنیشنل پبلک اسکول (PIPS) نامی تعلیمی ادارے میں پیش و کالج میں پیش آیا۔

موقع پر موجود طلبہ کا کہنا ہے کہ وہ حالیہ نتائج خراب آنے پر پریشان تھے۔ اور اس سلسلے میں اسکول انتظامیہ سے جواب چاہتے تھے کہ اس دوران ایڈمن آفیسر نے پہلے دھمکیاں دیں جب کہ بعد میں فائر کر دیے۔

واقعہ میں زخمی ہونے والے ایک طالبعلم کا کہنا تھا کہ ایڈمن آفیسر نے مجھے پستول کے دستے سے سر پر مارا، اس دوران فائر بھر کئے تاہم گولی میرے سر کو چھوتی ہوئی گزر گئی۔

طالبعلم کا کہنا تھا کہ ایڈمن آفیسر کی جانب سے اس موقع پر ہوائی فائرنگ کے علاوہ براہ راست گولیاں بھی چلائی گئیں۔

اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ ایبٹ آباد پولیس نے طلبہ کے سامنے کلاشنکوف لہرانے اور فائرنگ کرنے کے مبینہ ملزم کو حراست میں لے لیا ہے۔

اسکول و کالج انتظامیہ کی جانب سے تاحال معاملے کے متعلق کوئی تفصیل جاری نہیں کی گئی ہے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر زیرگرد اطلاعات میں یہ دعوی بھی کیا گیا ہے کہ فائرنگ کرنے والا فرد اسکول کا ایڈمن آفیسر نہیں بلکہ پرنسپل ہے۔ ساتھ ہی یہ بھی کہا گیا ہے کہ موقع پر موجود طلبہ نے اسے ایسا کرنے پر اکسایا ہے۔

 

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *