پی ٹی آئی نے اتحادی جماعت کو حکومت سے نکال دیا

پی ٹی آئی نے اتحادی جماعت کو حکومت سے نکال دیا

پشاور: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے خیبرپختونخوا میں اپنی اتحادی جماعت قومی وطن پارٹی کو ایک بار پھر حکومت سے نکالنے کا اعلان کر دیا ہے۔

پاکستان ٹرائب کے نمائندہ کے مطابق تحریک انصاف کے رہنما شاہ فرمان نے اس بات کا اعلان ہفتے کو کی گئی پریس کانفرنس میں کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ عدالتی فیصلے کے بعد قومی وطن پارٹی نے اپنا موقف بدل لیا۔

تحریک انصاف کے ترجمان کی جانب سے قومی وطن پارٹی کو صوبائی حکومت سے الگ کئے جانے کی وجہ بیان کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ انہوں نے پاناما معاملے پر ساتھ نہیں دیا۔

شاہ فرمان کا کہنا تھا کہ قومی وطن پارٹی پانامہ کیس میں ساتھ نہ تھی، ہم نےورکرز کو جواب دینا ہوتا ہے۔ ہم پر لوگوں کا پریشر ہے، صرف اقتدار کی خاطراکٹھے نہیں رہ سکتے۔

ان کا کہنا تھا کہ قومی وطن پارٹی سے کیوں اتحاد میں ہیں اس کا کوئی جواب نہیں ہے۔ کیو ڈبلیو پی سے راستےجداہیں اب وزیراعلیٰ ایکشن لیں گے۔

تحریک انصاف کی اتحادی حکومت نے چوتھی بار وزیراطلاعات کو تبدیل کرتے ہوئے شاہ فرمان کو گزشتہ ماہ وزارت اطلاعات کا قلمدان دوسری بار حوالے کیا تھا۔

یہ بھی دیکھیں: پاناما کیس فیصلے کا مکمل اردو ترجمہ

مئی کے آخر میں ایڈمنسٹریشن ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفیکیشن میں کہا گیا تھا کہ وزیراعلی نے شاہ فرمان کو موجودہ ذمہ داریوں سمیت اطلاعات کی ذمہ داری دینے کا اعلان کیا ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ کئی دنوں سے یہ اطلاعات زیرگردش تھیں کہ خیبرپختونخوا میں سہ رکنی اتحادی حکومت کی اکثریتی جماعت تحریک انصاف قومی وطن پارٹی کو الگ کر سکتی ہے۔

حالیہ پیش رفت کے بعد تحریک انصاف کو صوبائی حکومت برقرار رکھنے کے لئے اپنی موجودہ اتحادی جماعت اسلامی پر مزید انحصار کرنا پڑے گا۔

خیبرپختونخوا اسمبلی میں ارکان اسمبلی کے اعدادوشمار کے مطابق اگر جماعت اسلامی بھی تحریک انصاف سے الگ ہوتی ہے تو پی ٹی آئی حکومت برقرار رکھنے کے لئے درکار اکثریت کھو دے گی۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *