آصف کرمانی قابل اعتراض حالت میں رنگے ہاتھوں پکڑے گئے

آصف کرمانی قابل اعتراض حالت میں رنگے ہاتھوں پکڑے گئے

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں پولیس نے ایک گیسٹ ہاؤس پر چھاپہ مارکر کر وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کے معاون خصوصی  آصف کرمانی کو نینا اکبر نامی ایک خاتون کے ساتھ قابل اعتراض حالت میں رنگے ہاتھوں پکڑلیا۔

 آصف کرمانی کے ساتھ قابل اعتراض حالت میں پکڑی جانے والی نینا اکبر نامی خاتون شادی شدہ اور ایک بچی کی ماں ہیں، معروف کاروباری خاتون ہونے کے ناطے وہ فوڈ چین اور لاہو رمیں ایک فٹنس کلب کی مالکن بھی ہیں۔

سوشل میڈیا پر سامنے آنے والی اطلاعات کے مطابق پولیس نے گزشتہ شب اسلام آباد میں واقع حاجی سیف اللہ بنگش کے ملکیتی گیسٹ ہاؤس کے کمرہ نمبر 208 پر چھاپہ مار کر نواز شریف کے معاون خصوصی کو قابل اعتراض حالت میں پکڑا تھا۔

بعد ازاں آصف کرمانی نے پولیس اہلکاروں کو اپنا تعارف کرایا اور دباؤ بھی ڈالا جب کہ انہیں برطرفیوں اور سنگین نتائج کی دھمکیاں بھی دیں جس پر معاملے کو دبا دیا گیا۔

نینا اکبر گیسٹ ہاؤس میں گزشتہ شام اپنی سفید رنگ کی لینڈ کروزر نمبر ایل ای-900 میں شام پانج بجے تک داخل ہوئی تھی اور گیسٹ ہاؤس سے ایک بجے واپسی روانہ ہوئی جب کہ نواز شریف کے معاون خصوصی اپنی کرولا نمبر جی اے سی-605 میں گیسٹ ہاؤس پہنچے تھے۔

واقعے کے قریباً 20 گھنٹے گزرجانے کے بعد اب تک سوشل میڈیا پر نینا اکبر اور کرمانی سے کے پکڑے جانے کی اطلاعات ان کی تصاویر، گاڑیوں کی تصاویر اور نمبر کے ساتھ ساتھ اسلام آباد پولیس کے چھاپوں کے حوالے سے مسلسل سامنے آرہی ہیں۔

دوسری جانب آصف کرمانی نے مذکورہ اطلاعات کو سختی سے مسترد کرتے ہوئے کہا کہ یہ ان کے خلاف سازش اور منفی پروپیگینڈا ہے۔

انہوں نے کہا کہ انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا پر چلنے والا مواد گندی سیاست کا حصہ ہے اوران کے خلاف جھوٹی اور منفی مہم چلائی جارہی ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *