خراب امپائرنگ نے سری لنکا کو تاریخ ساز فتح دلوادی

خراب امپائرنگ نے سری لنکا کو تاریخ ساز فتح دلوادی

کولمبو: سری لنکا نے زمبابوے کے خلاف سیریز کے واحد ٹیسٹ میچ میں 388 رنز کا ہدف حاصل کرکے تاریخ ساز فتح اپنے نام کرلی۔

میزبان ٹیم کی جانب سے ڈکویلا اور اسیلا گونارتنے نے کلیدی کردار اداکیا، ڈکویلا 81 رنز بناکر آؤٹ ہوئے جب کہ گونا رتنے 80 رنز کے ساتھ ناقابل شکست رہے۔

کولمبو کے پریماداسا اسٹیڈیم میں کھیلے گئے اس میچ کے دوران اہم وقت پر خراب امپائرنگ بھی کافی حدتک لنکن ٹائیگرز کی تاریخ ساز فتح کا سبب بنی۔

میزبان ٹیم نے آخری روز جب کھیل کا آغاز کیا تو اسے فتح کے لیے مزید 218 رنز درکار تھے جب کہ اس کی سات وکٹیں باقی تھیں لیکن کھیل کے ابتدائی لمحات میں ہی زمبابوے نے مینڈس اور میتھیوز کی وکٹیں حاصل کر کے اپنی پوزیشن مستحکم کرلی۔

اس موقع پر سری لنکا کا اسکور جب تھے 237 پر پہنچا تو ڈکویلا سکندر رضا کی  ایک گیند کو سمجھنے میں ناکام رہے اور وکٹ کیپر نے فوری بیلز اڑاکر اسٹمپ کی اپیل کی تاہم فیلڈ امپائر نے کوئی فیصلہ دیے بغیر تھرڈ امپائر سے رجوع کیا۔

ری پلے میں واضح طور پر دکھا گیا کہ ڈکویلا کے پیر کا کوئی بھی حصہ کریز کے اندر موجود نہیں تھا جب کہ آؤٹ ہونے واضح ثبوت ہونے کے باوجودانہیں ناٹ آؤٹ قرار دیا گیا۔

اس فیصلے نے نہ صرف مہمان ٹیم بلکہ کمنٹٰیٹرز اور شائقین کرکٹ کو بھی حیران کردیا۔

بعد ازاں ڈکویلا نے اپنے حق میں ہونے والے فیصلے سے بھر پور فائدہ اٹھایا اور گونارتنے کے ساتھ 121 رنز جوڑ کر ٹیم کو فتح کے قریب پہنچادیا تاہم وہ 324 کے مجموعے پر ٹیم کا ساتھ چھوڑ گئے، اس موقع پر میچ کے بہترین قراردیے جانے والے بلے باز گونارتنے نے پریرا کے ساتھ 69 رنز کی شراکت قائم کرکے ٹیم کو منزل تک پہنچایا۔

یاد رہے کہ ہدف حاصل کرنے کے اعتبار سے ٹیسٹ کرکٹ میں یہ سری لنکا کی اب تک کی سب سے بڑی فتح ہے،جب کہ مجموعی اعتبار سے یہ پانچویں اور ایشیا میں سب سے بڑٰی کامیابی ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *