پاکستان میں بھارتی میڈیا کو کام کرنے کی اجازت

پاکستان میں بھارتی میڈیا کو کام کرنے کی اجازت

لاہور:لاہور ہائی کورٹ نے پاکستان میں بھارتی میڈیا کا تخلیق کردہ مواد نشر کرنے کی اجازت دے دی۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کے مطابق منگل کو لاہور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس منصور علی شاہ نے پیمرا کی جانب سے ملک میں بھارتی ڈراموں پر پابندی کے خلاف درخواست کی سماعت کی۔

اس موقع پر درخواست گزار کی وکیل عاصمہ جہانگیر نے عدالت کو بتایا کہ پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیرٹی اتھاڑی(پیمرا) نے ابتداء میں بھارتی فلموں اور ٹی وی شوز پر پابندی عائد کی تھی لیکن بعد ازاں صرف فلموں سے ہی پابندی ہٹائی گئی۔

انہوں نے سوال اٹھایا کہ جب فلموں سے پابندی ہٹالی گئی ہے تو بھارتی ڈراموں اور دیگر ٹی وی شوز پر پابندی کیوں عائد ہے؟

درخواست گزار کی وکیل کا یہ بھی کہنا تھا کہ صرف بھارتی ڈراموں اور ٹی وی شوز پر پابندی پیمرا کی جانب سے اختیارات کا ناجائز استعمال جب کہ ماورائے آئین ہے۔

عاصمہ جہانگیر کے مطابق حکومت بھارتی فلموں کی اجازت اور ٹی وی ڈراموں پر پابندی سے محدود حب الوطنی کا اظہار کررہی ہے۔

اس موقع پر جسٹس منصور علی شاہ نے درخواست گزار کے حق میں فیصلہ دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان مخالف مواد پر پابندی لگائی جاسکتی ہے لیکن بھارتی ڈراموں اور فلموں پر مکمل پابندی کا کوئی جواز نہیں بنتا۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *