سان مرینو 5 جی ٹیکنالوجی استعمال کرنے والا پہلا ملک بنے گا

سان مرینو 5 جی ٹیکنالوجی استعمال کرنے والا پہلا ملک بنے گا

روم: تھری جی ہو، فور جی یا ایک قدم آگے بڑھ کر 5 جی ٹیکنالوجی، انٹرنیٹ خاص طور پر موبائل انٹرنیٹ کی دنیا میں اسپیڈ کی اہمیت کا اندازہ لگانے کے لئے اب کسی خاص مہارت کی ضرورت باقی نہیں رہی۔ ٹیکنالوجی کی ترقی اور گزرتے وقت کے ساتھ ساتھ زندگی کی عمومی ضرورتیں اور دلچسپیاں انٹرنیٹ کے ذریعے اب ہماری ہتھیلیوں میں موجود اسمارٹ فونز تک پہنچ چکی ہیں۔

کچھ عرصہ قبل تک جن کاموں کے لئے لائنوں میں لگ کر یا پورا دن صرف کر کے انہیں نمٹایا جاتا تھا اب وہ چند کلکس کے ذریعے ہمارے اسمارٹ فونز پر ہی ہو جاتے ہیں۔ بس اس سب کچھ کے لئے شرط یہ ہے کہ آپ انٹرنیٹ سے کنیکٹڈ ہوں اور انٹرنیٹ کی اسپیڈ ویسی ہو جیسی اس کام کر کرنے کے لئے مطلوب ہے۔

ڈیجیٹل دنیا میں انٹرنیٹ پر یا عمومی طور پر اسی اسپیڈ کو پانے کے لئے شروع ہونے والا سفر 2 جی سے لے کر 4 جی تک تو پہنچ ہی چکا تھا۔ 5 جی بھی لیبارٹریز کی حد تک آزمائشوں سے گزر کر اپنی ضرورتیں واضح کرنے کے ساتھ خوش کن نتائج بھی فراہم کررہا تھا۔ چین، امریکا اور جنوبی کوریا سے تعلق رکھنے والے ادارے فائیو جی ٹیکنالوجی کو آزمائشی مراحل سے گزارنے میں مصروف تھے لیکن کسی جگہ اس کا عام استعمال اب تک شروع نہیں ہوا تھا۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کے مطابق اسی سلسلے کو جاری رکھتے ہوئے سان مرینو دنیا کا پہلا ملک بن رہا ہے جو مکمل طور پر 5 جی ٹیکنالوجی استعمال کرے گا۔

5 جی ٹیکنالوجی کون رائج کرے گا؟

اٹلی کے شہر روم میں صدر دفاتر رکھنے والی ٹیلی کیمونیکیشن کمپنی ٹیلی کام اٹالیہ نے اس بات کا ارادہ کیا ہے کہ وہ سان مرینو کو 5 جی استعمال کرنے والا پہلا ملک بنانے پر کام کرے گی۔

1994 میں قائم کی جانے والی اٹلی کی ٹیلی کام کمپنی نے 2014 میں ریکارڈ 21.57 بلین یورو کی آمدن حاصل کی تھی۔ ٹیلی کام اٹالیہ نے کہا ہے کہ وہ سان مرینو کو ایک ٹیسٹ بیڈ کے طور پر استعمال کر کے یہاں 5 جی ٹیکنالوجی کا تجربہ کرے گی۔

یہ بھی دیکھیں: یہ سروس صرف 6 ہزار روپے میں پاکستانی کو دبئی پہنچائے گی

اس مقصد کے لئے ٹیلی کام اٹالیہ نے حکومت کے ساتھ مفاہمتی یادداشت پر دستخط کئے ہیں جس کے بعد وہ آغاز میں ملک میں موجود 4جی نیٹ ورک کو 5جی میں تبدیل کرے گی۔

ٹیلی کام اٹالیہ اور حکومت سان مرینو کے درمیان معاہدے کے نتیجے میں موبائل سائٹس کی تعداد دوگنا ہو جائے گی جب کہ ملک بھر میں نئے مراکز بھی بنائے جائیں گے۔

سان مرینو کیوں خاص ہے؟

یورپ میں واقع سان مرینو San Marino شمال وسطی اٹلی سے ملحق اور پہاڑی علاقے پر مشتمل ملک ہے۔ دنیا کا قدیم ترین جمہوری ملک کہلانے والے سان مرینو کا کل رقبہ 61.2 کلومیٹر پر محیط ہے۔ عالمی بینک کی جانب سے 2015 میں جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق اس کی کل آبادی 31 ہزار 781 نفوس پر مشتمل ہے۔

معروف سیاحتی مقام ہونے کے ناطے ہوٹلز یہاں کا مفید کاروبار ہیں۔ سان مرینو میں کسی تھری اسٹار ہوٹل کا اوسط کرایہ تقریبا ساڑھی 9 ہزار پاکستانی روہے بنتا ہے۔

یہ بھی جانیں: سوشل میڈیا استعمال کرنے والی خواتین کی نصف تعداد جنسی حملوں کا شکار بنتی ہے

مائیکرو اسٹیٹ کہلانے والے سان مرینو میں 5 جی ٹیکنالوجی کے متعلق ٹیلی کام اٹالیہ موبائل کے ہیڈ آف ٹیکنالوجی جیوینی فیریگو کا کہنا ہے کہ سان مرینو یورپ میں 5 جی استعمال کرنے والا پہلا ملک ہو گا۔

5 جی ٹیکنالوجی میں کیا خاص ہے؟

یورپین کمیشن کی جانب سے گزشتہ برس 5 جی ٹیکنالوجی کے متعلق شائع کردہ رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ ہیلتھ کئیر، ٹرانپسورٹ، کاروں اور یوٹیلیٹی خدمات کے شعبے 2025 تک نئی ٹیکنالوجی کے ذریعے 113 ارب یورو کا فائدہ اٹھا سکیں گے۔

5 جی ٹیکنالوجی پر مبنی نیٹ ورک قائم کرنے کا تخمینہ 56 ارب یورو لگایا گیا تھا جب کہ توقع ظاہر کی گئی ہے کہ اس کے نتیجے میں 23 لاکھ نئی ملازمتیں تخلیق کی جا سکیں گے۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کو دستیاب اعدادوشمار کے مطابق متعدد ممالک 2019 تک 5 جی ٹیکنالوجی کو اختیار کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں تاہم بحیثیت مجموعی ٹیلی کام انڈسٹری اس مسئلے کا شکار ہے کہ 5 جی ٹیکنالوجی حقیقت میں کیا ہے۔ کچھ کا یہ بھی کہنا ہے کہ ابھی تک اس ٹیکنالوجی کے لئے اربوں روپے کی مطلوب سرمایہ کاری کا کوئی جواز سامنے نہیں آ سکا ہے۔

ٹیلی کام اٹالیہ موبائل کے فیریگو کا کہنا ہے کہ سان مرینو میں 5 جی ٹیکنالوجی کی فعالیت دیگر شعبوں کو اسے اپنانے میں موجود رکاوٹوں یعنی خاموش سوالوں کا جواب دے سکے گی۔

5 جی ٹیکنالوجی کیا ہے؟

5 جی کی اصطلاح فور جی ایل ٹی ای کے بعد کے موبائل نیٹ ورکس کو بیان کرنے کے لئے استعمال کی جاتی ہے۔ اگر چہ اب تک انٹرنیشنل ٹیلی کیمونیکیشن یونین یا انٹرنیشنل موبائل ٹیلی کیمونیکیشن کی جانب سے 5 جی کے معیارات واضح نہیں کئے گئے ہیں تاہم ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ 20 جی بی فی سیکنڈ سے زیادہ رفتار رکھنے والی کنیکٹیویٹی ہو گی۔

اس کے نتیجے میں ناصرف لوگ ایک دوسرے سے رابطے میں رہ سکیں گے بلکہ مشینیں، گاڑیاں، شہروں کے انفراسٹرکچر اور پبلک سیفٹی سے متعلق امور کو بھی باہم رابطے میں رکھا جا سکے گا۔

5 جی نیٹ ورکس مسلسل آن رہنے والا ایسا نظام ہو گا جو کم سے کم توانائی استعمال کرے گا۔ توقع ظاہر کی جا رہی ہے کہ 5 جی نیٹ ورک موجودہ رائج فور جی ایل ٹی ای کی توسیع شدہ شکل ہوگا۔ ابتداء میں یہ ایل ٹی ای کے ایڈوانسڈ اسٹینڈرڈز پر کام کرے گا۔

شاہد عباسی

پاکستانی صحافی اور ڈیجیٹل میڈیا اسٹریٹیجسٹ شاہد عباسی، پاکستان ٹرائب کے بانی، ایڈیٹر ہیں۔ پاکستان کے اولین ڈیجیٹل میڈیا صارفین میں سے ایک شاہد عباسی بلاگنگ اور خارزار صحافت کے علاوہ اپنے کریڈٹ پر دو ناولز بھی رکھتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *