پاکستان میں سوشل میڈیا کے مقبول ترین ٹی وی چینلز اور موضوعات

پاکستان میں سوشل میڈیا کے مقبول ترین ٹی وی چینلز اور موضوعات

پاکستان میں تھری جی اور فور جی ٹیکنالوجی عام ہو جانے کے بعد انٹرنیٹ صارفین میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔ ایک محتاط اندازے کے مطابق پاکستان کی کل آبادی کا 15 تا 19 فیصد حصہ انٹرنیٹ پر موجود ہے۔ اس پس منظر میں ڈیجیٹل باالخصوص سوشل میڈیا نے ایک متبادل ابلاغی محاذ کی حیثیت حاصل کر لی ہے۔

انٹرنیٹ اور اس سے جڑے میڈیمز کی مقبولیت کے بعد روایتی میڈیا باالخصوص الیکٹرانک میڈیا نے اسے نظر انداز کرنے کی اپنی ابتدائی روش کو ترک کرتے ہوئے اس سے فوائد حاصل کرنے شروع کئے۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام میڈیا ڈیسک کے مطابق پرنٹ میڈیا کی تمام ریڈر شپ کے 70 لاکھ سے نیچے آجانے، الیکٹرانک میڈیا ناظرین کی اکثریت کے 35 تا 40 برس عمر سے زائد ہونے نے بھی انٹرنیٹ کی اہمیت کو دوچند کرتے ہوئے روایتی میڈیا کو آمادہ کیا کہ وہ یہاں اپنی موجودگی کو یقینی اور موثر بنائیں۔

رواں سال یعنی 2017 کے ابتدائی چھ ماہ میں پاکستان کے بیشتر نیوز ٹی وی چینلز نے سوشل میڈیا پر اپنی موجودگی پر خصوصی توجہ دی ہے یا پھر ایسی کوششوں کا آغاز کیا ہے۔

وائس آف پاکستان کے تحقیق و تجزیہ ڈیسک کی جانب سے جاری کردہ خصوصی رپورٹ میں اس بات کا جائزہ لیا گیا ہے کہ کون سے پاکستانی ٹی وی چینلز نے سوشل میڈیا پر کیا کیا ہے۔

رپورٹ میں سوشل میڈیا پر بہتر انداز میں سامنے آنے والے پانچ بڑے چینلز میں اے آر وائی، ایکسپریس نیوز، سماء، جیو نیوز اور دنیا نیوز کو شامل کیا گیا ہے۔

رواں برس کے ابتدائی چھ ماہ میں اے آر وائی نیوز نے فیس بک پر جب کہ ایکسپریس نیوز نے ٹوٹر پر اپنی اول پوزیشن برقرار رکھی۔

صارفین کی انگیجمنٹ کے حوالے سے ایکسپریس نے فیس بک پر اپنی برتری برقرار رکھی جب کہ جیو نے یہی اعزاز ٹوٹر پر برقرار رکھا ہے۔

ایکسپریس نیوز نے ایک کروڑ افراد کو اپنے مواد کے ساتھ انگیج رکھا، نیو ٹی وی، 92 نیوز ایچ ڈی اور ڈان نیوز نے سوشل میڈیا کو مزید موثر انداز میں استعمال کرنے کے لئے اپنے اسٹاف میں اضافہ کیا۔

سوشل میڈیا پر سب سے مقبول چینلز
نیو نیوز، 92 نیوز، بول نیوز اور 24 نیوز نے سوشل میڈیا پر اپنی موجودگی میں اضافہ کیا۔

آج نیوز اور اب تک نیوز کی مقبولیت ماضی کے مقابلے میں کم ہوئی۔

نیوز ون، کیپیٹل ٹی وی، دن نیوز، چینل 5 اور 7 نیوز نے سوشل میڈیا کو خاص اہمیت نہ دینے کی روش برقرار رکھی۔

سوشل میڈیا پر زیادہ فعال ٹی وی چینلز
سوشل میڈیا سائٹس پر فعال ترین ٹی وی چینلز نے اپنے فیس بک صفحات پر ہر ہفتے اوسطا 250 تا 350 پوسٹس صارفین تک پہنچائیں۔

جائزے میں دلچسپ پہلوؤں کی نشاندہی کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ جیو نیوز سب سے زیادہ ٹویٹس کرنے والا ٹی وی چینل رہا۔

ڈان نیوز نے بلاگنگ کے شعبے میں سب سے اچھا پرفارم کیا۔

سماء نیوز نے ویڈیوز کے شعبے میں اچھا کام کی۔

ایکسپریس نیوز نے قومی اور دلچسپ خبروں میں بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

اے آر وائی اور جیو نیوز نے سیاسی خبروں میں بہتر پرفارمنس دکھائی۔

جیو، اے آر وائی اور دنیا نے خبروں پر تجزیوں میں اپنی مقبولیت برقرار رکھی۔

مقبول میڈیا شخصیات اور پروگرامز
رواں برس کے ابتدائی چھ ماہ میں اے آر وائی کے ارشد شریف، اقرار الحسن اور وسیم بادامی سوشل میڈیا پر سب سے زیادہ گفتگو کا حصہ بنے۔

کامران خان اور سہیل وڑائچ دنیا نیوز سے جب کہ رؤف کلاسرہ 92 نیوز اور نیو ٹی وی سے اوریا مقبول جان سب سے زیادہ ڈسکس کئے جاتے رہے۔

جیو نیوز کا پروگرام ‘آج شاہزیب خانزادہ کے ساتھٓ’ سوشل میڈیا پر مقبول رہا۔

جاوید چوہدری کے موضوعات اور ریمنڈ ڈیوس کی کتاب بھی سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر مقبول موضوعات میں شامل رہے۔

جیو نیوز اور اے آر وائی نیوز نے پاناما کیس پر زیادہ اثر ڈالا۔ دونوں چینلز نے معاملے کے متعلق عوامی رائے کو تقسیم کرنے میں کلیدی کردار ادا کیا۔

اسی عرصے میں ٹوٹر پر ٹرینڈز کرنے والے موضوعات میں سب سے زیادہ کا تعلق پاناما سے رہا۔

سوشل میڈیا پر مقبول خبریں
سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر سب سے زیادہ مقبول خبروں یا موضوعات میں پاکستانی سپہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ، راحیل شریف کی اسلامک ملٹری اتحاد کی سربراہی، تئیس مارچ کی پریڈ، ڈان لیکس اور آئی ایس پی آر کی ٹویٹ، مریم نواز کی ٹویٹ اور جرمن صحافی کا جواب، قطرے شہزادہ، تلور کا شکار، پارہ چنار دھماکے، آپریشن ردالفسار، کراچی میں پانی کا مسئلہ، کے الیکٹرک سے وابستہ مسائل شامل رہے۔

دریں اثناء رمضان المبارک کے دوران خصوصی ٹرانسمیشنز بھی سوشل میڈیا ڈسکشنز کا حصہ رہیں۔ بول نیوز کو اپنے بڑھا چڑھا کر پیش کئے گئے دعووں کے متعلق تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔ مختلف چینلز کے گیم شوز اور ان کے طریقے کو بھی شدت سے تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔

پاکستانی میڈیا کیا کہتا ہے؟

ایکسپریس میڈیا گروپ کے سوشل میڈیا ہیڈ وقار احمد نے پاکستان ٹرائب سے گفتگو میں کہا کہ وہ انٹرنیٹ باالخصوص سوشل میڈیا کی حقیقی طاقت سے بخوبی آگاہ ہیں۔ نئے میڈیم کی اہمیت کے پیش نظر ایکسپریس میڈیا گروپ اپنے تمام کاموں میں سوشل میڈیا یوزر کو مدنظر رکھتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی ٹی وی چینلز کے سوشل میڈیا پر فعال ہونے سے صارفین خصوصا 20 تا 30 برس عمر کے نوجوانوں کی خبروں میں دلچسپی بڑھی ہے۔

پاکستانی نیوز چینلز پر پیش کئے جانے والے تجزیاتی پروگرامز کے علاوہ معمول کی نشریات بھی اب یوٹیوب پر بنے چینلز پر لائیو نشر کی جاتی ہیں۔ موبائل فون صارفین بیٹری اور ڈیٹا کے محدود ہونے کی وجہ سے ابھی تک یوٹیوب پر لائیو نشریات کو زیادہ ترجیح دینے پر آمادہ نہیں البتہ خاص مواقع پر ایسا ضرور کیا جاتا ہے۔

میڈیا ماہرین کا کہنا ہے کہ انٹرنیٹ پر ٹی وی چینلز ایک حد تک فائدہ تو اٹھاسکتے ہیں تاہم پیش کردہ معاملے کی تفصیلات نہ ہونا، مخصوص ایجنڈوں پر عملدرآمد اور یوزرز کے بجائے مواد کو اب بھی ادارتی انتخاب کے ذریعے طے کرنا انہیں انٹرنیٹ سے بھرپور فائدہ نہیں اٹھانے دے گا۔

شاہد عباسی

پاکستانی صحافی اور ڈیجیٹل میڈیا اسٹریٹیجسٹ شاہد عباسی، پاکستان ٹرائب کے بانی، ایڈیٹر ہیں۔ پاکستان کے اولین ڈیجیٹل میڈیا صارفین میں سے ایک شاہد عباسی بلاگنگ اور خارزار صحافت کے علاوہ اپنے کریڈٹ پر دو ناولز بھی رکھتے ہیں۔

One thought on “پاکستان میں سوشل میڈیا کے مقبول ترین ٹی وی چینلز اور موضوعات

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *