آٹزم کا شکار لڑکیاں معمولات زندگی نبھانے میں  ناکام

آٹزم کا شکار لڑکیاں معمولات زندگی نبھانے میں  ناکام

نیویارک: آٹزم ایک دماغی بیماری جس میں بچے اپنے ہی خیالوں کی دنیا میں گم رہتے ہیں،دنیا کی نامور شخصیحات اس مرض کا شکار رہی ہیں جن میں مائیکرو سافٹ کے بانی بل گیٹس اور روس کے صدر پیوٹن سرفہرست ہیں۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام ہیلتھ ڈیسک کے مطابق نیشنل ہیلتھ سسٹم یو ایس کی جانب سے کی گئی ایک حالیہ تحقیق کے مطابق آٹزم کا شکار لڑکوں کے مقابلے میں لڑکیوں کو معمولات زندگی نبھانے میں زیادہ مشکل پیش آتی ہے۔

ماہرین نے اس حوالے سے آٹزم کا شکار 7 سے 18 سال تک کی   79 بچیوں اور 158 لڑکوں پر ایک تحقیق کی جس میں  روزمرہ زندگی میں پیش آنے والے معمولات کا جائزہ لیا گیا۔

ریسرچ کے مطابق لڑکوں کے مقابلے میں لڑکیوں کو روزمرہ معمولات جیسا کہ  صبح خود اٹھ کر تیار ہونا وغیرہ میں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اس نئی تحقیق کے نتائج نے ہمیں حیران کر دیا کیونکہ یہ اس نوعیت کی پہلی ریسرچ ہے جس میں آٹزم کی بیماری کے لڑکوں اور لڑکیوں پر علیحدہ اثرات سامنے آئے ہیں۔

ماہرین کے مطابق اس نئی تحقیق کے نتائج سامنے آنے کے بعد یہ بات اہم ہے کہ اس مرض کا شکار بچیوں کو زیادہ توجہ کی ضرورت ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *