خبردار! واٹس ایپ آپ کا ڈیٹا دوسروں کے سامنے ظاہر کر سکتی ہے

خبردار! واٹس ایپ آپ کا ڈیٹا دوسروں کے سامنے ظاہر کر سکتی ہے

اسلام آباد: دنیا بھر میں اربوں صارفین کی پسندیدہ موبائل ایپلیکیشن واٹس ایپ اس وقت سب سے زیادہ استعمال ہونے والی ایپ بن چکی ہے تاہم خبردار رہیں کہ یہ آپ کا ڈیٹا دوسروں کے سامنے ظاہرکر سکتی ہے۔

ٹیکنالوجی ماہرین کا کہنا ہے کہ ان اربوں صارفین کے ساتھ ایسے عناصر بھی واٹس ایپ استعمال کرنے والوں کا حصہ ہیں جن کا مقصد اس ایپلیکیشن کو ہیک کرنا ہو سکتا ہے۔ یہی وہ مقام ہے جہاں سے واٹس ایپ صارفین کے لئے خطرے کا آغاز ہوتا ہے۔

اسی مسئلہ کو حل کرتے ہوئے صارفین کو سیکورٹی دینے کے لیے واٹس ایپ WhatsApp نے اینڈ- ٹو-اینڈ انکرپشن ایپ میں شامل کر دی ہے- تاہم ماہرین کا کہنا ہے کہ مسئلہ اب بھی حل نہیں ہوا ہے۔

واٹس ایپ کی جانب سے اگر چہ سیکیورٹی صورتحال بہتر ہونے کے اعلانات کئے گئے ہیں مگر پھر بھی کسی وقت لیک کا خدشہ بدستور موجود ہے۔ فرض کر لیں کہ کسی وجہ سے واٹس ایپ اپنا ڈیٹا خود ہی ظاہر کر دے تو بطور صارف آپ کچھ نہیں کر سکتے۔

واٹس ایپ استعمال کرتے ہوئے کسی اندرونی خرابی یا بیرونی خدشے کے سبب کسی بھی قسم کا ڈیٹا لیک یا ظاہر ہونے کا سب سے بڑا نقصان یہ ہے کہ اس ایپلیکیشن کو ذاتی مقاصد سمیت تجارتی اور دیگر مختلف معاملات کے لئے استعمال کیا جا رہا ہوتا ہے۔ اس دوران بنیادی نوعیت کا ڈیٹا ظاہر ہو جانے سے ہیکرز کسی بھی فرد کی آن لائن زندگی کو کسی بھی قسم کا نقصان پہنچا سکتے ہیں۔

واٹس ایپ آپ کا ڈیٹا کیسے لیک کرتی ہے؟

گوگل کی ملکیتی معروف ویڈیو سائٹ یوٹیوب YouTube صارف کولین ہارڈی نے ایسے ہی ایک مسئلے کو دریافت کیا تھا جس کے مطابق اس ایپ کے پچھلے ورژن نے (جو جون میں آیا تھا) اپنا ڈیٹا خود لیک یا ظاہر کردیا تھا-

 

 

معاملہ کو آسانی سے سمجھنے کے لئے ہم کہہ سکتے ہیں کہ واٹس ایپ ویب پرویوز کے مسئلہ کی وجہ سے اپنا ڈیٹا خود لیک کرتی ہے۔ یہ اس وقت ہوتا ہے جب آپ اپنی گفتگو کے دوران ویب سائٹ پر ٹائپ کرتے ہیں تو اس وقت آپ کے میسیج کے اوپری حصے میں اس پیغام کا پری ویو نظر آرہا ہوتا ہے۔

واٹس ایپ ڈیٹا کیسے ظاہر ہوتا ہے؟
آپ جب ٹائپ کرتے ہیں اس وقت واٹس ایپ آپ کے آئی پی ایڈریس کو استعمال کر کے ویب سائٹ کو queries درخواست ارسال کرتا ہے۔
مثلا اگر آپ یوٹیوب ڈاٹ کام پر کچھ ٹائپ کر رہے ہوں تو واٹس ایپ آپ کی آئی پی کو استعمال کر کے ویب سائٹ کو براہ راست ریکوئسٹ بھیجے گا۔ اس مرحلے پر یہ ریکوئسٹ کسی بھی جانب سے تلاش trace کی جا سکتی ہے۔

اینڈ-ٹو-اینڈ یعنی انتہائی انکرپشن کے باجود واٹس ایپ آپ کے آئی پی ایڈریس کو سب کے لئے کھول دیتا ہے۔ اس دوران اگر کوئی مشتبہ فرد آپ کی سرگرمی پر نظر رکھے ہو تو وہ واٹس ایپ کوئری query کے ذریعے آپ کے آئی پی ایڈریس کو جان سکتا ہے۔

ٹوٹر یہ مسئلہ کیسے حل کرتا ہے؟
عموما رابطے کی درخواستیں مختلف ویب سائٹس کے سرورز کی جانب سے بھیجی جاتی ہیں۔ مثلا ٹوٹر ویب سائٹ سے رابطے کی درخواست آپ کی آئی پی کو استعمال کر کے بھیجنے کے بجائے اپنے سروس کے ذریعے ارسال کرتا ہے۔ اس عمل کے دوران ٹوٹر سرور کی آئی پی ویب سائٹ کو موصول ہوتی ہے البتی بطور صارف آپ کا آئی پی ریکارڈ اس ویب سائٹ تک نہیں جاتا۔

واٹس ایپ کی حالیہ اپ ڈیٹ کے بعد توقع ظاہر کی جا رہی ہے کہ شاید آئی پی لیک ہونے کا یہ عمل ختم ہو چکا ہو گا۔ تاہم جب تک یہ بات واضح نہیں ہو جاتی یا واٹس ایپ باقاعدہ طور پر اس کا اعلان نہیں کر دیتا تب تک باہمی رابطے کی سب سے بڑی ایپلیکیشن پر لنک شئیر کرنے سے گریز کریں۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *