انڈین اداکار دلیپ کمار کی ساتھی اداکارہ سے جنسی زیادتی

انڈین اداکار دلیپ کمار کی ساتھی اداکارہ سے جنسی زیادتی

کوچی:بھارتی فلم انڈسٹری کے سپرسٹار ہیرو دلیپ کو ساتھی اداکارہ کو اغوا اور بعد ازاں ریپ کا نشانہ بنانے کے الزام میں14دن کے لیے جیل بھیج دیا گیا۔

پاکستان ٹرائب کے انٹرٹینمنٹ ڈیسک سے موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق جنوبی بھارت کی فلم انڈسٹری میں ملایم زبان میں بننے والی فلموں کے سٹار دلیپ کمار پر الزام تھا کہ اس نے رواں برس فروری میں ساتھی اداکارہ کو ساتھیوں کی مدد سے اغوا کے بعد ریپ کا نشانہ بنایا۔

پولیس نے48سالہ اداکار سے کئی گھنٹے تک تفتیش کی تھی تاہم گزشتہ رات گرفتار کرکے14دن کےلیے جیل بھیج دیا گیا۔

اداکار کو ریاست کیرالہ کے شہر کوچی کی پولیس نے رات دیر گئے گرفتار کیا،وہ اب تک100سے زائد فلموں میں کام کر چکے ہیں۔

بھارتی ٹی وی کے مطابق اداکار دلیپ نے خود کو بے گناہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ انہیں اور فلم کے ڈائریکٹر کو ڈیڑھ کروڑ روپے کے لیے بلیک میل کیا جا رہا ہے۔

ریپ اور اغوا کے الزامات مسترد کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ وہ بے گناہ ہیں اور اپنی بے گناہی ثابت کرکے رہیں گے۔

دوسری جانب پولیس اداکارہ کو اغوا اور ریپ کے بعد اس کی فحش تصاویر لینے کے مقدمے میں دیگر افراد سے بھی تفتیش کر رہی ہیں۔

یاد رہے کہ ملایم فلموں میں کام کرنے والی27 سالہ اداکارہ کو رواں برس17 فروری کو مبینہ طور پر اغوا کرکے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

اداکارہ نے18 فروری کو اپنے ڈرائیور سمیت سنیل کمار،الیاس پلسار سنی اور وجیش نامی شخص کے خلاف مقدمہ درج کروایا تھا، جس کے بعد اداکارہ کے ڈرائیور کو گرفتار کرکے مقدمے کی تفتیش شروع کردی گئی تھی۔

تفتیش کے دوران پولیس کو اداکار دلیپ کے ملوث ہونے کے شواہد بھی ملے،جس پر گزشتہ ماہ اداکار سے12 گھنٹے تک پوچھ گچھ کی گئی تھی۔

ریاست کیرالہ میں یہ مقدمہ اتنی شدت اختیار کرگیا کہ وہاں کے وزیر اعلیٰ کو بھی اس میں کودنا پڑا،وزیر اعلیٰ پنیارائی وجاین نے کہا تھا کہ قانون سے کوئی بھی بالاتر نہیں ملوث افراد کو سزا دی جائے گی۔

واقعہ رونما ہونے کے بعد بھارتی قانون کے تحت اداکارہ کا نام اور چہرے کی شناخت خفیہ رکھی گئی،تاہم یہ بتایا گیا کہ ریپ کا نشانہ بننے والی اداکارہ75سے زائد فلموں میں کام کرچکی ہے۔

اداکارہ کو ریپ کا نشانہ بنائے جانے کے بعد جنوبی بھارت کی فلم انڈسٹری کی خواتین نے بھی اپنی ساتھی اداکارہ کے لیے مہم چلائی۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *