تیزابیت،جلن کیلئے ادویات،موت کا خطرہ بڑھائیں

تیزابیت،جلن کیلئے ادویات،موت کا خطرہ بڑھائیں

واشنگٹن: سینے میں جلن،کھانا ہضم نہ ہونے یا معدے میں تیزابیت کے لیے استعمال کی جانے والی ادویات موت کا باعث بھی بن سکتی ہیں۔

پاکستان ٹرائب ہیلتھ ڈیسک کے مطابق واشنگٹن یونیورسٹی اسکول آف میڈیسین کی تحقیق میں بتایا گیا کہ یہ عام استعمال ہونے والی ادویات جنھیں پی پی آئیز بھی کہا جاتا ہے،متعدد طبی مسائل بشمول گردوں کی خرابی،ہڈیوں کے فریکچر اور دماغی تنزلی وغیرہ کا خطرہ بھی بڑھاتی ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ سینے کی جلن،السر اور معدے کے دیگر مسائل کے اس حوالے سے متعدد ادویات عام استعمال ہوتی ہیں مگر تحقیق میں کہا گیا کہ اب وقت آگیا ہے کہ ان کے استعمال پر پابندی عائد کی جائے۔

 تحقیق کے دوران اس طرح کی ادویات استعمال کرنے والے لگ بھگ تین لاکھ افراد کے طبی ریکارڈ کا جائزہ لیا گیا جبکہ معدے کی تیزابیت میں کمی لانے والی دوائیاں کھانے والے 75 ہزار افراد کو بھی دیکھا گیا۔

ماہرین کے مطابق  ان ادویات کا استعمال کرنے والوں میں مختلف وجوہات کی بناءپر موت کا خطرہ بڑھ جاتا ہے،لوگ سمجھتے ہیں کہ یہ ادویات بہت محفوظ ہوتی ہیں کیونکہ یہ آسانی سے مل جاتی ہیں تاہم طویل عرصے تک ان کا استعمال انتہائی خطرناک ثابت ہوسکتا ہے۔

انہوں نے مشورہ دیا کہ ضرورت پڑنے پر ہی ان ادویات کا استعمال کیا جائے اور بلاضرورت کھانے سے گریز کریں۔

تحقیق کے مطابق ان ادویات کا استعمال عادت بنالینے سے کسی بھی بیماری کی وجہ سے موت کا خطرہ 25 فیصد تک بڑھ جاتا ہے۔

ریسرچ کے مطابق یہ ادویات کولہے کے فریکچر کا خطرہ 35 فیصد،ہارٹ اٹیک کا 2 فیصد جبکہ دماغی تنزلی کا 44 فیصد تک بڑھا دیتی ہیں۔

 

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *