نو بال پر آؤٹ ہونا میری خواہش تھی،فخز زمان کے دلچسپ انکشافات

نو بال پر آؤٹ ہونا میری خواہش تھی،فخز زمان کے دلچسپ انکشافات

اسلام آباد:قومی کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر فخر زمان کا کہنا ہے کہ نو بال پر آؤٹ ہونا میری خواہش تھی۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام اسپورٹس ڈیسک کے مطابق پاکستان کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر اور چیمپئنز ٹرافی کے فائنل میں شاندار کارکردگی سے قوم کا دل جیتنے والے فخز زمان کا کہنا ہے کہ پریکٹس کے دوران میری طبیعت خراب تھی لیکن ڈاکٹرز نے بتایا کہ میں آرام کروں گا تو صبح کھیل سکون گا۔

فخز زمان کا کہنا تھا کہ صبح میں نے فزیو کو پیغام بھجوایا کہ میں فٹ ہوں اور کھیلوں گا۔

نو بال پر آؤٹ ہونے کے بعد سنچری مکمل کرنے کے سوال پر فخر زمان کا کہنا تھا کہ میں نے ایسے ہی ایک دن شاداب خان کو کہا کہ میری خواہش ہے کہ میں نو بال پر آؤٹ ہو کر واپس آؤں۔

حسن علی کا کہنا تھا کہ میرے لیے تمام وکٹیں ہی اہم تھیں کیونکہ وہ تمام وکٹیں میں نے پاکستان کے لیے حاصل کی اور پاکستان کو اس کی ضرورت تھی۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شعیب ملک کا کہنا تھا کہ چیمپئنز ٹرافی میں بھارت کے خلاف پہلا میچ ہارنے کے بعد کھلاڑی بہت مایوس تھے۔

 شعیب ملک کا کہنا تھا کہ پہلا میچ ہارنے کے بعد سینئر کھلاڑیوں نے جونئرز کو سہارا دیا۔

شعیب ملک کا کہنا تھا کہ مکی آرتھر نے میٹنگ کال کر کے ہمیں امید دلائی اور ہمت بندھائی۔

سپورٹس تجزیہ نگار ڈاکٹر نعمان نیازی کے سوال کا جواب دیتے ہوئے شعیب ملک کا کہنا تھا کہ میں 2019 کا ورلڈ کپ بھی کھیلنا چاہتا ہوں لیکن جس طرح مجھ پہ تنقید ہو رہی ہے مجھے نہیں لگتا کھیل سکوں گا۔

تجزیہ نگاروں کی تجاویز پر بات کرتے ہوئے شعیب ملک کا کہنا تھا کہ کھلاڑی کو ہٹانا اور اس کی جگہ نیا لانا کافی آسان ہوتا ہے لیکن اس کے اثرات کافی برے ہوتے ہیں۔

یاد رہے وزیر اعظم نواز شریف کی جانب سے پاکستان ٹیم کے اعزاز میں استقبالیہ دیا گیا ہے جس کی تقریب وزیر ہاؤس میں جاری ہے۔

تقریب میں وزیر اعظم، سمیت وفاقی وزراء  پی سی بی حکام  اور ٹیم کے کھلاڑی اہلخانہ کے ساتھ شریک ہیں۔

وزیر اعظم نواز شریف کھلاڑیوں کو ایک ایک کروڑ روپے کا انعام دیں گے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *