یوٹیوب پر ویڈیو کیلئے لڑکی کے ہاتھوں دوست قتل

یوٹیوب پر ویڈیو کیلئے لڑکی کے ہاتھوں دوست قتل

منی سوٹا: سوشل میڈیا کی ایجاد تو لوگوں کو سماجی میل جول بڑھانے میں مدد دینے کے لئے ہوئی تھی لیکن بدقسمتی سے اب یہ ایک ایسا وبال بن گیا ہے جس کے زریعے دھوکہ کھانے،لٹنے اور حتٰی کہ جان سے جانے والوں کی مثالیں آئے روز سامنے آتی ہیں۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام ورلڈ ڈیسک کے مطابق منی سوٹا میں بھی ایک ایسا ہی افسوسناک واقعہ پیش آیا ہے جہاں سوشل میڈیا کی شیدائی 19سالہ لڑکی مونالیزا پیریزیوٹیوب پر تہلکہ برپا کرنے کے لیے ایک ویڈیو ریکارڈ کرنے کی کوشش میں اپنے بوائے فرینڈ کو گولی مار بیٹھی ہے۔

رپورٹ کے مطابق گولی کا نشانہ بننے والے 22سالہ پیڈروروئز کا تعلق منیسوٹا کے علاقے نارمن کاﺅنٹی سے تھا۔

پولیس کے مطابق یہ المناک آئیڈیا دراصل پیڈرو کا ہی تھا جو یہ ثابت کرنا چاہتاتھاکہ ایک موٹی کتاب کو گولی سے بچنے کے لئے استعمال کیا جا سکتا ہے،وہ اس تجربے کو ایک ویڈیو کی صورت میں ریکارڈکرکے یوٹیوب پر پوسٹ کرنا چاہتاتھا۔

 جب مونا لیزا نے گولی چلائی تو اس نے سخت جلد والا انسائیکلوپیڈیا اپنی چھاتی کے سامنے تھام رکھاتھا،بدقسمتی سے اس کا خیال غلط ثابت ہوا اور گولی کتاب کو چیرتی ہوئی اس کے سینے میں پیوست ہو گئی جس کے نتیجے میں وہ موقع پر ہی ہلاک ہو گیا۔

دونوں رواں سال مارچ سے مختلف قسم کی ویڈیوز بنا کر یوٹیوب چینل،لاءمونا لیزا،پر پوسٹ کررہے تھے،اس سے پہلے ان کی ویڈیوز چھوٹے موٹے کرتبوں پر مبنی ہوتی تھیں لیکن پہلی بار وہ کتاب کے ساتھ گولی کو روکنے جیسے خطرناک کرتب کی ویڈیو بنارہے تھے۔

 مونالیزا نے 26جون کو ایک ٹوئیٹ کے ذریعے بتایاتھا کہ وہ اور پیڈروایک انتہائی خطرناک ویڈیو بنانے والے ہیں،اس کا یہ بھی کہنا تھاکہ یہ آئیڈیا پیڈروکاتھا۔
یاد رہے کہ یوٹیوب پر شہرت پانے کے لیے خطرناک ویڈیو ز بنانے کا رجحان نوجوان نسل میں عام ہوچکا ہے،اس سے پہلے بھی متعدد افراد خطرناک ویڈیو زبنانے کی کوشش میں جان کی بازی ہارچکے ہیں۔

 

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *