عید منانے والوں نے ملکہ کہسار مری بند کردیا

عید منانے والوں نے ملکہ کہسار مری بند کردیا

مری: ملکی کہسار مری میں تہواروں کے موقع پر رش نئی بات نہیں تاہم گزشتہ عید کی طرح اس بار بھی عید منانے والوں نے تفریح کی غرض سے مری پہنچ کر شہر کو لاک ڈاؤن جیسی کیفیت کا شکار کردیا۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کے نمائندہ کے مطابق مری میں باہر سے آنے والے کے رش کے سبب اندرونی ہی نہیں بلکہ بیرونی سڑکیں اور راستے بھی جابجا ٹریفک جام کے نظارے پیش کر رہے ہیں۔

مری ٹریفک پولیس کے حکام نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ گزشتہ 24گھنٹوں میں 16 ہزار گاڑیاں شہر میں داخل ہوئیں جب کہ صرف 7 ہزار 25 باہر نکلی ہیں۔

شدید رش سے نمٹنے کے تحت خصوصی اقدامات کرتے ہوئے مری آنے والوں کو ہدایت کی گئی ہے وہاں داخل ہونے والی گاڑیوں کو بغیرروٹ یا اسپیشل پرمٹ داخلے کی اجازت نہیں ہو گی۔

ٹریفک پولیس کی جانب سے یہ ہدایات بھی جاری کی گئی ہیں کہ سیاح سڑکوں پر کھڑے پر کرسیلفیاں نہ بنائیں اور پارکنگ کے لئے مخصوص مقامات ہی استعمال کئے جائیں گے۔

سرسبزو شاداب نظاروں،تفریحی مقامات اور خوبصورت موسم کی وجہ سے سیاحوں کی دلچسپ کا خصوصی مرکز رہنے والا مری پیرپنجال سلسلہ کوہ پر واقع ہے۔ قیام پاکستان سے قبل ہی سے سیاحتی مقام کی شناخت رکھنے والے مری کے باسی شاکی رہتے ہیں کہ انہیں سہولیات کی کمی کا سامنا ہے جب کہ یہاں سے حاصل آمدن میں دلچسپی لینے والی حکومت خرچ کرنے میں بخل سے کام لیتی ہے۔

سطح سمندر سے 2ہزار 291 میٹر بلند مری جغرافیائی اعتبار سے خیبرپختونخوا کے ہزارہ ڈویژن سے ملحق ہے البتہ انتظامی طور پر یہ صوبہ پنجاب کا حصہ ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *