نہال ہاشمی کو مسلم لیگ ن سے نکال دیا گیا

نہال ہاشمی کو مسلم لیگ ن سے نکال دیا گیا

اسلام آباد:ن لیگی رہنما نہال ہاشمی کو اشتعال انگیز گفتگو کرنے اور جے آئی ٹی کو دھمکیاں دینے کے جرم کی پاداش میں ن لیگ نے نہال ہاشمی کو پارٹی سے نکال دیا ہے۔

پاکستان ٹرائب کو دستیاب اطلاعات کے مطابق نہال ہاشمی نے اٹھائیس مئی کی اپنی تقریر میں جے آئی ٹی کو کھلم کھلا دھمکیاں دیں جس کے بعد سپریم کورٹ نے ن لیگی رہنما کی تقریر کا ازخود نوٹس لیا۔

نہال ہاشمی کی تقریر کے بعد وزیراعظم نے ایک پانچ رکنی کمیٹی تشکیل دی جس نے آج اپنی سفارشات پیش کی جن میں کہا گیا ہے کہ نہال ہاشمی کو پارٹی سے نکال دیا جائے۔

وزیراعظم نواز شریف نے پارٹی کی سفارشات منظور کرتے ہوئے نہال کو پارٹی سے نکال دیا ہے۔

اس سے قبل نہال ہاشمی سے سینیٹ کی سیٹ سے بھی استعفیٰ مانگ لیا گیا تھا جس پر نہال ہاشمی نے چئیرمین سینیٹ سے ملاقات کے بعد کہا تھا کہ ان کا استعفیٰ قبول نہ کیا جائے کیونکہ انھوں نے ایسا پارٹی دباؤ میں آ کر کیا تھا۔

یاد رہے کہ نہال ہاشمی کی تقریر کے بعد مختلف سیاسی جماعتوں نے کہا تھا کہ نہال نے جو کچھ کہا ہے اس پر انھیں حکومتی ایماء حاصل ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *