آسٹریلیا کو40رنز سےشکست،انگلینڈ،بنگلہ دیش سیمی فائنل میں

آسٹریلیا کو40رنز سےشکست،انگلینڈ،بنگلہ دیش سیمی فائنل میں

ایجبسٹن: آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی کی میزبانی کرنے والے انگلش کرکٹ ٹیم کے بین اسٹوکس اور این مورگن نے روایتی حریف آسٹریلیا کے بالرز کو بے بسی کی تصویر بنا ڈالا۔

گزشتہ دونوں میچز جیتنے کے بعد سیمی فائنل کے لئے کوالیفائی کر جانے والی انگلش ٹیم کو ڈی ایل ایس طریقہ کار کے تحت 40 رنز سے فاتح قرار دے دیا گیا۔

قبل ازیں انگلش ٹیم کی اننگ کے دوران 41 ویں اوور میں بارش کے بعد کھیل دوسری بار روکا گیا تھا۔ سنچری میکر اسٹوکس 102 اور بٹلر29 رنز کے ساتھ کریز پر موجود تھے۔ مقررہ وقت تک بارش نہ رکنے کی وجہ سے انگلش ٹیم کو فاتح قرار دیا گیا۔

ہفتے کو برمنگھم کے ایجبسٹن کرکٹ گراؤنڈ میں پہلے ہی سے سیمی فائنل کے لئے کوالیفائی کر جانے والے انگلش ٹیم نے ٹاس جیت کر آسٹریلیا کو بیٹنگ کی دعوت دی۔

اس مرحلے پر انگلش بالرز نے اپنے کپتان کے فیصلے کی لاج رکھنے کی کوشش کی تاہم آسٹریلین کھلاڑی اسکور کو 9 وکٹوں کے نقصان پر 277 تک لے جانے میں کامیاب رہے۔

ہدف کے تعاقب میں انگلش ٹیم نے بیٹنگ شروع کی تو ابتدائی تین وکٹیں آسٹریلین بالرز جلد لے اڑے،اس مرحلے پر بارش بھی آڑے آئی لیکن گراؤنڈ میں واپس آنے کے بعدانگلش کپتان مورگن اور بین اسٹوکس نے گراؤنڈ میں چاروں جانب جارحانہ اسٹروکس کی بارش کر دی۔

ایک مرحلے پر یوں محسوس ہوا کہ یہی دونوں کھلاڑی ٹیم کو فتح دلا دیں گے تاہم بین اسٹوکس کی ایک شاٹ پر رن لینے کے دوران ہونے والی غلط فہمی کپتان مورگن کو زمپا کے ہاتھوں رن آؤٹ کروا گئی۔

81 گیندوں پر 87 رنز بنا کر این مورگن آؤٹ ہوئے تو انگلش ٹیم کو کامیابی کے لئے مزید 84 رنز درکار تھےاور 18 اوورز کا کھیل باقی تھا۔

39 گیندوں پر دھواں دھار ففٹی بنانے والے بین اسٹوکس نے108 گیندوں پر 13 چوکوں اور 2 چھکوں کی مدد سے اپنی سنچری مکمل کی۔ انہوں نے کپتان کے آؤٹ ہونے کے بعد نسبتا محتاظ انداز اپنایا تاہم جو بٹلر کے ساتھ اسکور آگے بڑھانے کا سلسلہ جاری رکھا۔

قبل ازیں آسٹریلین اننگ میں ہیڈ71 رنز کے ساتھ ٹاپ اسکورر رہے،کپتان اسمتھ نے 56 رنز بنائے جب کہ اوپنر فنچ 68 رنز بنا سکے۔ وانر 21 رنز پر آؤٹ ہوئے،ہنریکس 17 میکسویل 20 کے علاوہ باقی کھلاڑی گراؤنڈ میں آنے اور واپس جانے کا کام ہی کرتے رہے۔

انگلش بالرز میں سے عادل رشید نے 10 اوورز میں 41 رنز دے کر 4 وکٹیں لیں جب کہ وڈ بھی مقررہ اوورز میں 33 رنز کے عوض 4 کھلاڑیوں کے پویلین لوٹنے کی وجہ بنے۔ایک کھلاڑی کو اسٹوکس نے آؤٹ کیا۔

گروپ اے سے انگلینڈ کے علاوہ بنگلہ دیش سیمی فائنلز کھیلیں گے جن کا مقابلہ گروپ بی سے اوپر آنے والی دو ٹیموں کے درمیان ہو گا۔ حالیہ چیمپئنز ٹرافی ٹورنامنٹ اس لئے بھی خاص ہے کہ 1998 میں اس کے آغاز کے بعد سے پہلی بار ویسٹ انڈیز رینکنگ میں نووین نمبر پر ہونے کی وجہ سے مقابلوں سے باہر رہی۔

دفاعی چیمپئن انڈین کرکٹ ٹیم کا کل جنوبی افریقہ سے اوول میں مقابلہ باقی ہے جب کہ پاکستان نے 12 جون پیر کو سری لنکا سے صوفیا گارڈنز میں مقابلہ کرنا ہے۔ دونوں میچز بارش کا شکار نہ ہوئے تو ان مقابلوں کی فاتح ٹیمیں گروپ اے کے کوالیفائرز سے ٹکرائیں گی۔

 

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *