ایک چیز جو ائیر ہوسٹس سے کبھی نہیں مانگنی چایئے

ایک چیز  جو ائیر ہوسٹس سے کبھی نہیں مانگنی چایئے

اسلام آباد: ہوائی سفر کے دوران مشروبات پینے کی ترغیب دی جاتی  مگر پینے کی ایک چیز ایسی بھی ہے جس کے بارے میں فلائیٹ اٹینڈنٹ یہ مشورہ دیتے ہیں کہ اس سے پرہیز ہی کیا جائے۔

پاکستان ٹرائب لائف اسٹائل ڈیسک کے مطابق بزنس انسائڈر سے بات کرتے ہوئے ایک ائیر ہوسٹس نے بتایا کہ ہوائی سفر کے دوران کبھی بھی پانی نہیں پینا چایئے کیونکہ جہاز پر ملنے والا پانی عموما گندا ہوتا ہے۔

ائیر ہوسٹس کا کہنا تھا کہ جہاز کا عملہ خود بھی پلین کافی،پلین چائے یا پانی نہیں پیتا جب تک کہ بوتل کا پانی جو کہ سیلڈ ہو میسر نہ آئے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ ہوائی جہاز میں ملنے والا پانی جس ٹینک سے آرہا ہوتا ہے اس کے بارے میں یقینی طور نہیں کہا جا سکتا کہ آیا وہ صاف ہے یا نہیں۔

رپورٹ کے مطابق جہاز میں ملنے والے پانی کا ٹینک کئی ہفتوں تک صاف نہیں کیا جاتا جس کی وجہ سے یہ محفوظ نہیں ہوتا جبکہ اہم بات یہ ہے کہ ہوائی جہاز کا عملہ اس بات سے باخبر ہوتا ہے۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ امریکا میں آج سے 15 سال پہلے ایسوسی ایشن آف فلائیٹ اٹینڈنٹ کو ہدایات جاری کی گئی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ وہ پانی کے ٹینک اور فلیش وغیرہ کی صفائی کو یقینی بنائیں مگر بزنس انسائڈر کے مطابق ان ہدایات پر کبھی بھی عمل نہیں کیا گیا۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *