ہیروئن کی لت روکنے والی ویکسین تیار

ہیروئن کی لت روکنے والی ویکسین تیار

سان ڈیاگو: سائنسدانوں کا دعویٰ ہے کہ نہوں نے ہیروئن نشے کی لت روکنے والی ویکسین تیارکرلی ہے،اسے اینٹی ہیروئن ویکسین کہا جاسکتا ہے جو ہیروئن کے اثرات دماغ تک جانے سے روکتی ہے اور ہیروئن جیسے نشے کے بعد دماغ میں کیف و سرور کی کیفیت کو بھی کم کرتی ہے۔

پاکستان ٹرائب ہیلتھ ڈیسک کے مطابق  امریکی شہر سان ڈیاگو کے دی اسکرپس ریسرچ انسٹی ٹیوٹ(ٹی ایس آر آئی)کے ماہر کِم جینڈا اور ان کے ساتھیوں نے اسے بندروں پر آزمایا ہے اور اس کے انجیکشن ہیروئن کی طلب کو روکتے ہیں اور دوبارہ اس میں ملوث ہونے کا رحجان بھی کم ہوتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق یہ ویکسین جسم کے قدرتی دفاعی  نظام پر ہیروئن کی ساخت اور تفصیلات ظاہر کردیتی ہے جس کے بعد دماغ خود ہیروئن کے خلاف ایک دفاعی نظام بنالیتا ہے اب اگلے مرحلے میں یہ دفاعی نظام منشیات کے اجزا کو ختم کردیتا ہے اور انہیں دماغ تک جانے سے روکتا ہے،اس کے علاوہ ہیروئن کا نشہ اور سرور بھی روکتا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ  ہیروئن کا خمار چڑھنے سے روکا جائے یا اس کی دماغی رسائی کو بند کیا جائے تو بار بار اس کے شکار ہونے کے خطرات کو کم کیا جاسکتا ہے۔

ورجینیا کامن ویلتھ یونیورسٹی کے ماہرین نے  اس دوا کو چار بندروں پر آزمایا، ویکسین میں تھوڑی تبدیلیاں کرکے اسے ہیروئن شناخت کرنے کے قابل بنایا گیا تھا۔

ماہرین کے مطابق  ہیروئن سے جان چھڑانے والی ویکسین اب انسانوں پرآزمائش کے لیے تیار ہے اور اس کے کوئی سائیڈ افیکٹس بھی  نہیں ہیں۔

 

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *