جے آئی ٹی ممبران کو پچیس پچیس کروڑ کی آفر

جے آئی ٹی ممبران کو پچیس پچیس کروڑ کی آفر

اسلام آباد:چیئرمین متروکہ وقف املاک بورڈ صدیق الفاروق نے پیپلز پارٹی کے رہنماء سردار نبیل گبول کو اپنے اوپر جھوٹا اور من گھڑت الزام عائد کرنے پر ایک ارب روپے ہرجانے کا قانونی نوٹس بھجوا دیا۔

پاکستان ٹرائب کو دستیاب اطلاعات کے مطابق نبیل گبول نے24مئی کو ایک نجی ٹی وی کے پروگرام میں صدیق الفاروق پر الزام عائد کیا تھا کہ انہوں نے وزیر اعظم کی حمایت کے لیے جے آئی ٹی کے چھ میں سے چار ممبران کو پچیس ،پچیس کروڑ روپے دینے کی آفر کی ہے۔

نبیل گبول نے یہ بھی الزام عائد کیا ہے کہ یہ آفر کمیٹی کے4میں سے دو ممبرز نے مسترد کر دی ہے جس پر صدیق الفاروق نے جھوٹا الزام اور ذہنی اذیت دینے پر اپنے وکیل ناصر احمد اعوان ایڈووکیٹ کے ذریعے ایک ارب روپے ہرجانے کا نوٹس دیا ہے۔

صدیق الفاروق نے یہ موقف اختیار کیا ہے کہ اگر نبیل گبول پندرہ دنوں میں معافی نہ مانگیں گے تو ہرجانے کی رقم وصول کرنے کے لیے ان کے خلاف قانونی چارہ جوئی کی جائے گی۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *