کراچی پولیس 74منشیات اڈوں کی مالک،خواتین اہلکاربھی شامل

کراچی پولیس 74منشیات اڈوں کی مالک،خواتین اہلکاربھی شامل

کراچی: پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں منشیات فروشی اور جوئے کے اڈوں کے متعلق سامنے آنے والی رپورٹ میں انکشاف ہوا ہے کہ شہر کے 74 اڈوں کے مالک پولیس اہلکار ہیں۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کے نمائندہ کے مطابق منشیات فروشی اور دیگر متعلقہ جرائم کے اہم مراکز کہے جانے والے ان اڈوں کو چلانے میں کراچی پولیس کی 10 خواتین اہلکار بھی ملوث ہیں۔

رپورٹ کے مطابق خواجہ اجمیر نگری تھانے کا اہلکار ظفر بھی ان اہلکاروں میں شامل ہے جو منشیات فروشی کے غلیظ ترین دھندے کا حصہ ہیں۔

کراچی کے ضلع غربی میں قائم جوئے و منشیات کے اڈوں میں سے18 جب کہ ضلع جنوبی میں قائم موت بانٹنے والے مقامات میں سے 5 کا کنٹرول پولیس اہلکاروں کے پاس ہے۔

یاد رہے کہ کراچی پولیس اس سے پہلے بھی سنگین کرپشن اور قانون مخالف اقدامات میں ملوث ہونے کے متعلق رپورٹس کا ہدف رہی ہے۔ پولیس اہلکارو وافسران جرائم پیشہ گروہوں سے تعلقات،رہزنی و ڈکیتیوں کی وارداتوں،زمینوں پر قبضوں سمیت سنگین جرائم میں بھی ملوث پائے جاتے رہے ہیں۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *