الٹرا ساؤنڈ،پیٹ میں موجود بچے کے لئے نقصان دہ

الٹرا ساؤنڈ،پیٹ میں موجود بچے کے لئے نقصان دہ

لندن: اس میں کوئی شک  نہیں ہے کہ حاملہ خواتین کا الٹرا ساونڈ پیٹ میں موجود بچے کو نقصان پہنچاتا ہے مگر پھر بھی مائیں ذرا ذرا سی بات پر پرائیویٹ طور پر الٹراساونڈ کروانا شروع کر دیتی ہیں جو خود ان کے لئے بھی اور بچے کے لئے بھی مضر ہے۔

نیشنل انسٹٹیوٹ فار ہیلتھ اینڈ کلینیکل ایکسی لینس کی جانب سے کی جانے والی ایک ریسرچ کے مطابق خواتین پرائیویٹ طور پر غیر ضروری الٹرا ساونڈ کرواتی ہیں جس سے پیٹ میں موجود بچے کی صحت پر مضر اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ کوئی چھپی ہوئی بات نہیں ہے کہ الٹرا ساونڈ پیٹ میں موجود بچے کے لئے نقصان دہ ہے مگر پھر بھی مائیں غیر ضروری طور پر اس عمل سے گزرتی رہتی ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ الٹرا ساونڈ 12 ہفتے ہیں ایک اور 20 ویں ہفتے میں دوسرا کافی ہے،اگرچہ یہ بھی بچے کی صحت کے حوالے سے  درست نہیں مگر ان سے بچے کی بڑھوتری وغیرہ کے بارے میں معلومات حاصل ہو جاتی ہیں اور اگر الٹرا ساونڈ کا دورانیہ 30 منٹ سے زیادہ کا ہو تو یہ اور بھی نقصان دہ ثابت ہوتا ہے۔

ماہرین کا یہ بھی کہنا ہے کہ خود مائوں کو اس حوالے سے سمجھ داری برتنے کی ضرورت ہے کیونکہ پرائیویٹ طور پر الٹرا ساونڈ کرنے والے افراد کو صرف پیسے سے غرض ہوتی ہے اس لئے انہیں اس بات پر کوئی اعتراض نہیں ہوتا کہ آپ کتنے الٹرا ساونڈ کروا رہی ہیں۔

ماہرین کا یہ بھی کہنا ہے کہ الڑا ساونڈ صرف اشد ضرورت کے وقت ہی کروائیں اور یہ بات ہمیشہ یاد رکھیں کہ یہ پیٹ میں موجود بچے کے لئے مسائل کا سبب بنتا ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *