خواتین مردوں کے مقابلے میں زیادہ یاسیت کا شکار

خواتین مردوں کے مقابلے میں زیادہ یاسیت کا شکار

نیویارک: خواتین مردوں کے مقابلے میں تین گنا زیادہ یاسیت،ڈپریشن،خوف اور گھبراہٹ کا شکار ہوتی ہیں،یہ کہا گیا ہے کہ ایک نئی تحقیق میں۔

مینٹل ہیلتھ فاؤنڈیشن کی جانب سے جاری کی جانے والی رپورٹ کے مطابق خواتین اپنی زندگی میں مردوں کے مقابلے میں تین گنا زیادہ ذہنی مسائل کا شکار ہوتیں ہیں جن میں یاسیت،گھبراہٹ،خوف اور ڈپریشن شامل ہیں۔

لیڈ ریسرچر ڈاکٹر جینی ایڈورڈ کا کہنا ہے کہ 70 فصد خواتین ذہنی مسائل پوسٹ ٹریومیٹک اسٹریس ڈس آرڈر(پی ٹی ایس ڈی)کا شکار ہیں اور اس کی بڑی وجہ بچوں کی دیکھ بھال کی زمہ داری اور زندگی میں اونچے نیچے تعلقات ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ خاندان جتنا بڑا ہو گا خواتین کو اتنا زیادہ ذہنی مسائل کا سامنا کرنا پڑے گا جبکہ غربت کم آمدن میں گزر اوقات کرنے کے حوالے سے بھی خواتین مردوں سے زیادہ فکر مند ہوتی ہیں۔

ریسرچ سے یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ عمر رسیدہ خواتین کے مقابلے میں جوان عورتیں ذہنی مسائل کا زیادہ شکار ہوتی ہیں کیونکہ انہوں نے ابھی عملی زندگی شروع کی ہوتی ہے اور آنے والے معاملات انہیں متفکر رکھتے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ معاشی طور پر آسودہ زندگی گزارنے والی خواتین کو ذہنی مسائل کا کم سامنا کرنا پڑتا ہے مگر مڈل کلاس اور لوئر کلاس کی خواتین ان مسائل کا بہت زیادہ شکار ہوتی ہیں۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *