جعلی پیر کے ہاتھوں جنسی زیادتی کا نشانہ بننے والی نوبیاہتا دلہن نے خود کشی کر لی

جعلی پیر کے ہاتھوں جنسی زیادتی کا نشانہ بننے والی نوبیاہتا دلہن نے خود کشی کر لی

مظفر گڑھ:مظفر گڑھ کے علاقے شاہ جمال میں نو بیاہتا دلہن نے جعلی پیر کے ہاتھوں مبینہ جنسی زیادتی کا نشانہ بننے کے بعد خود کشی کر لی۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کےمطابق پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ 20 سالہ نصرت بی بی کی ایک ماہ قبل اکرم سے شادی ہوئی تھی،شادی کے ایک ماہ بعد نصرت کی ساس کو لگا کہ اس کی ذہنی حالت ٹھیک نہیں ہے،جس پر وہ اسے قاری اقبال کے پاس دم جھاڑ کروانے لے گئی۔

قاری اقبال نے نصرت کی ساس کو بتایا کہ مریضہ آسیبی قوتوں کے زیر سایہ ہے جس کے اس کا روحانی علاج کرنا پڑے گا۔ قاری اقبال نے جنات نکالنے کے نام پر گرم چھریوں سے خاتون کے چہرے اور جسم کو داغ کر زخمی کر دیا۔

گرم پہنچنے پر نصرت نے زہر کھا لیا،حالت نازک ہو جانے پراسے فوری اسپتال منتقل کیا گیا جہاں بتایا گیا کہ اسے تشدد کا نشانہ بنائے جانے سے قبل جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا ہے۔

پولیس کے مطابق قاری اقبال حراست میں لیے جانے سے قبل ہی اپنی رہائش سے فرار ہو گیا جس کی تلاش کی جا رہی ہے۔

 

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *