گھنٹوں میں مکان تیار کرنے والی ٹیکنالوجی ایجاد

گھنٹوں میں مکان تیار کرنے والی ٹیکنالوجی ایجاد

میساچیوسیٹس انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی کے ماہرین نے ایک عظیم الجثہ تھری ڈی پرنٹر تیار کیا ہے جو صرف 14 گھنٹے میں پورا مکان چھاپ کر تیارکرسکتا ہے۔

پاکستان ٹرائب ٹیکنالوجی ڈیسک کے مطابق اس گاڑی نما پرنٹر کے دو بازو ہیں اور گاڑی کی پشت پر دو ٹینکس ہیں جن میں تعمیراتی مٹیریل بھرا ہوا ہے یہ پورا نظام ایک بہت بڑا تھری ڈی پرنٹر ہے جو نہ صرف زمین بلکہ چاند اور مریخ پر بھی خلانوردوں کے لیے فوری مکان بنانے کے لیے استعمال کیا جاسکے گا۔

اس کے روبوٹک بازو پر ایک نوزل ہے جو مٹیریل باہر پھینک کر چند گھنٹوں میں بالکل نیا گھر بنادیتا ہے اس کے روبوٹک بازو نہایت احتیاط  لیکن تیزی سے مٹیریل بکھیرتے ہیں ،اس کے علاوہ ایک اور چمچہ نما بازو تعمیراتی سامان اٹھا کر رکھتا رہتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق اس کی خاص بات اس کا وسیع دائرہ ہے جو ایک گھر بناتا رہتا ہے،تھری ڈی مشین کو آفت زدہ اور غریب علاقوں میں فوری طور پر مکان بنانے کے لیے استعمال کیا جاسکتا ہے۔

ساتھ ہی یہ مکان کے اندر تار اور ضروری پائپس لگاتا رہتا ہے ایم آئی ٹی ماہرین کے مطابق یہ مکان برفیلے علاقوں اور انتہائی گرم علاقوں میں ہر قسم کے موسم کا مقابلہ کرسکتا ہے۔

 

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *