روس بغیر گولی گرم پانیوں تک پہنچ گیا

روس بغیر گولی گرم پانیوں تک پہنچ گیا

پشاور: عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) کے جنرل سیکرٹری میاں افتخار کا کہنا ہے کہ عالمی سیاسی منظرنامہ یکسر تبدیل ہورہا ہے،روس بغیر گولی چلائے گرم پانیوں تک پہنچ گیا ہے۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کے نمائندہ کے مطابق اپنے ایک حالیہ انٹرویو میں میاں افتخار حسین کا کہنا تھا کہ المی قوتوں کی ترجیحات بدل رہی ہیں،روس اور چین کا رویہ الگ نظر آرہا ہے،طالبان اور القاعدہ کے بجائے داعش وجود میں آچکی ہے۔

گزشتہ عام انتخابات سے قبل پاکستان کے شمال مغربی صوبے کی حکمراں جماعت کے رہنما کا کہنا تھا کہ اس صورتحال میں پاکستان کی آزمائشیں بھی وقتی طور پر کم ہوئی ہیں،آپریشن ضرب عضب کے باعث تھوڑا سکون ہوا ہے۔

موجودہ حکومتی جماعتوں کے متعلق بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ زمام اقتدار خیبر پختونخوا میں تحریک انصاف اور مرکز میں ن لیگ کے ہاتھ آئی تو دونوں ہی حکومتیں عوام کو ڈیلیور کرنے میں ناکام رہیں،مسائل بڑھتے گئے،مہنگائی عروج پر پہنچ گئی،لوڈ شیڈنگ میں کوئی فرق نہیں آیا۔

تحریک انصاف کے حوالے سے میاں افتخار حسین کا کہنا ہے کہ جو جماعت خود دہشت گردوں کو سپورٹ کر رہی ہو،ان کے لئے دفاتر قائم کرنے کی باتیں کر رہی ہو وہ کیسے امن لا سکتی ہے۔

پرویز خٹک کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ ہ کس طرح کہہ سکتے ہیں کہ کے پی کے کے محکمہ پولیس میں اصلاحات کیں،پچھلے دنوں کی ایک ویڈیو جس میں ایک اہلکار معمر شخص کو لاتیں مار رہا ہے پی ٹی آئی کی کارکردگی سے پردہ اٹھا رہی ہے۔

عالمی منظر نامے کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ عالمی طاقتیں نے مفادات کے لئے کسی بھی حد سے گزرنے کو تیار ہیں،روس جو کبھی گرم پانیوں کے لئے پاگل پن کا مظاہرہ کر رہا تھا آج بغیر گولی استعمال کئے گرم پانیوں تک رسائی حاصل کر چکا ہے اور پھر سے عالمی منظر نامے میں کلیدی کردار ادا کرنے کے لئے پر تول رہا ہے۔

روس نے افغانستان اور خطے کے متعلق اپنی پالیسی پر نظر ثانی کی جس کی وجہ سے دشمن اب دوست بنتے جا رہے ہیں۔

میاں افتخار کا کہنا تھا کہ امریکا نے طالبان اور اسرائیل نے داعش بنائی جس کے لئے 35 ملک فنڈنگ کر رہے ہیں،اگر دیکھا جائے تو دونوں نے تباہی کے لئے ایک ہی راستہ چنا ہے اور دونوں ہی پاکستان کے خلاف ہیں۔

تیسری عالمی جنگ پر بات کرتے ہوئے انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ خطے میں دو گروپ وجود میں آچکے ہیں جن میں سے ایک روس ٓ،چین اور پاکستان ہے اور دوسراایران،بھارت اور افغانستان ہے جبکہ دوسرے گروپ کو امریکا کی حمایت حاصل ہے اور یہ تمام چیزیں مل کر تیسری عالمی جنگ کا پیش خیمہ ثابت ہوں گی۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *