لاونکا ٹرمپ کا اسکول جنسی زیادتیوں میں آگے

لاونکا ٹرمپ کا اسکول جنسی زیادتیوں میں آگے

واشنگٹن: یو ایس ٹاپ بورڈنگ اسکول جس میں جان ایف کینیڈی،مائیکل ڈگلس اور ٹرمپ کی بیٹی لاونکا ٹرمپ پڑھی ہیں کے بارے میں ایک رپورٹ شائع کی گئی ہے جس میں یہ ہولناک انکشاف کیا گیا ہے کہ اس اسکول میں طالبات کو جنسی زیادتیوں کا نشانہ بنایا جاتا تھا۔

رپورٹ کے مطابق اس اسکول کی ٹیوشن فیس 43 اعشاریہ 500 ڈالر سے زیادہ ہے،اس اسکول کے 12 اساتذہ کی نشاندہی کی گئی ہے جو 1963 سے 2010 تک طالبات کو جنسی زیادتیوں کا نشانہ بناتے رہے ہیں۔

تمام اسکولوں سے جمع کئے گئے اعداد وشمار  سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ طالبات کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کے حوالے سے یہ اسکول سب سے آگے ہے۔

طالبات کو جنسی زیادتیوں کا نشانہ بنانے کے حوالے سے پولیس کے پاس کوئی رپورٹ درج نہیں کرائی گئی جو اس بات کا ثبوت ہے کہ جن طالبات کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا جاتا رہا انہیں اسکول سے نکالنے اور جان سے مارنے کی دھمکیاں دی جاتی رہی ہیں۔

اس حوالے سے دو اسٹوڈنٹس نے بورڈ کو شکایت لگائی تھی مگر وہ کچھ ثابت نہیں کیا جا سکا کیونکہ ڈر کی وجہ سے کوئی بھی گوائی دینے کو تیار نہیں ہوا۔

رپورٹ کے مطابق 48 صفحات پر مشتمل رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جنسی زیادتی کا نشانہ بنائے جانے والی طالبات کو ذبردستی مانع حمل گولیاں استعمال کرائی جاتی تھیں۔

اس رپورٹ کے شائع ہونے پر اسکول بورڈ کے چئیر میں اور ہیڈ ماسٹر نے  ایک جاری کیا ہے جس میں ان سب واقعات پر معافی مانگی ہے اور اس رپورٹ کو تباہ کن قرار دیا ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *