راحیل شریف کی سعودی حکومت کو تنبیہہ

راحیل شریف کی سعودی حکومت کو تنبیہہ

اسلام آباد:سابق آرمی چیف جنرل(ر)راحیل شریف نے سعودی عرب کی حکومت کو مشورہ دیا ہے کہ عرب لیگ جیسے علاقائی فورم کے بجائے او آئی سی کو فعال کرنے کی طرف توجہ مبذول کی جائے جس کے پلیٹ فارم پر تمام اسلامی ملک موجود ہیں۔

پاکستان ٹرائب کو دستیاب اطلاعات کے مطابق سابق جنرل راحیل شریف نے سعودی حکومت کو تنبیہہ دے دی ہے۔

سابق جنرل راحیل شریف کا کہنا تھا کہ مستقبل میں ممکنہ طور پر بنائے جانے والے اسلامی اتحاد کے زیراہتمام کم از کم پانچ لاکھ مکمل طور پر تربیت یافتہ فوجیوں پر مشتمل ایسی فوج تیار کی جائے گی جو فوری طور پر تیار کئے جانے کے لئے عسکری امور سرانجام دیں سکیں گے۔

روزنامہ خبریں کے مطابق جنرل(ر)راحیل شریف کا موقف ہے کہ عرب لیگ کو اہمیت دینے سے پہلے بھی سعودی عرب کو اسلامی دنیا میں تنہائی کا سامنا کرنا پڑا ہے اور اب بھی اگر سعودی حکومت اس فورم پر توجہ مبذول رکھتی ہے تو اس سے ایک بار پھر دہشتگردی سے لڑنے کے لئے تشکیل دیا جانے والے مذکورہ اسلامی اتحاد کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ او آئی سی میں سب اسلامی ممالک موجود ہیں اور اس تنظیم کو بین الاقوامی قبولیت بھی حاصل ہے اور اگر کسی ملک میں اس حوالے سے کارروائی کے لئے اگر کسی قانونی اقدام کی ضرورت پڑتی ہے تو عرب لیگ یہ قانونی تحفظ فراہم نہیں کرسکتی۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *