جماعت اسلامی رہنماحافظ نعیم الرحمن رہا

جماعت اسلامی رہنماحافظ نعیم الرحمن رہا

کراچی: کے الیکٹرک کی جانب سے بلاتعطل بجلی فراہمی میں ناکامی،اووربلنگ ختم کرنے اور عوام کو ریلیف دینے کے عدالتی احکامات نہ ماننے پر اعلان کردہ احتجاج سے قبل گرفتار ہونے والے جماعت اسلامی کراچی کے سربراہ انجنئیر حافظ نعیم الرحمن کو رہا کردیا گیا۔

نمائندہ پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کے مطابق کراچی پولیس نے جماعت اسلامی کے دفتر ادارہ نور حق کا گھیرائو کرنے کے علاوہ دیگر مقامات پر چھاپے مارکرگرفتاریاں کی تھیں۔

اس موقع پر جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن شارع فیصل نرسری پر اعلان کردہ دھرنا میں شرکت کے لئے پولیس کی رکاوٹیں توڑ کر باہر آئے تو انہیں بھی دیگر قائدین کے ساتھ گرفتار کرلیا گیا تھا۔ جس کے بعد انہوں نے پولیس لاک اپ میں ہی گرفتار کارکنوں اور دیگر قائدین کے ہمراہ دھرنا دے ڈالا۔

عوامی مسئلہ پر ہونے والے احتجاج سے روکنے کی کوشش اور کے الیکٹرک کے نازیبا رویے سے تنگ افراد کی جانب سے واقعہ کا شدید ردعمل آنے کے بعد انہیں کئی گھنٹے حراست میں رکھ کررہا کر دیا گیا۔

جماعت اسلامی کراچی کے سربراہ کی رہائی کے بعد سامنے آنے والے پارٹی ترجمان کے ردعمل میں کہا گیا ہے کہجماعت اسلامی کا دھرنا پر امن تھا،حکومتی اقدامات سے حالات خراب ہوئے۔

دریں اثنا حافظ نعیم الرحمن نے دھرنا کے لئے موجود کارکنان کو شارع فیصل پر ٹریفک کا دبائو بحال رکھنے میں تعاون کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ ٹریفک میں پھنسی ہوئی گاڑیوں کی رش سے نکلنے میں رہنمائی کریں۔

ترجمان جماعت اسلامی کا کہنا تھا کہ شارع فیصل پر دھرنے کے دوران کسی گاڑی کو نقصان پہنچا اور نہ ہی کوئی شیشہ ٹوٹا۔ عوام ٹریفک رش سے کہیں زیادہ کے الیکٹرک کے مظالم اور نااہلیوں سے پریشان ہیں۔

دوسری جانب جماعت اسلامی کراچی کی جانب سے احتجاج کے لئے شارع فیصل اور ارد گرد مختلف مقامات پر موجود کارکنوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ پارٹی کے کراچی دفتر پہنچیں۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *