“سعودی اتحاد،حکومت ہر معاملے کو الجھا رہی ہے”

“سعودی اتحاد،حکومت ہر معاملے کو الجھا رہی ہے”

اسلام آباد:نجی ٹی وی چینل جیو نیوز کے پروگرام میں ن لیگی رہنما طارق فضل چودھری نے کہا ہے کہ ایک فرد کی خدمت مانگنے،ریاست کے اتحاد میں شامل ہونے کا معاملہ الگ ہے،سعودی اتحاد سے متعلق حکومت نے پارلیمنٹ کے فیصلے پرعمل کیا۔

پاکستان ٹرائب کو دستیابا طلاعات کے مطابق ن لیگ کے طارق فضل چودھری،پی پی پی کی شازیہ مری اور پی ٹی آئی کے شاہ محمود قریشی نے پروگرام”کیپٹل ٹاک”میں شمولیت اختیار کی اور اسلامی اتحاد کی سربراہی سابق جنرل راحیل شریف کو سونپے جانے پر بحث کر رہے تھے۔

ن لیگی رہنما طارق فضل چوہدری نے کہا کہ پہلے بھی ریٹائرڈ جنرل بیرون ملک خدمات سر انجام دیتے رہیں ہیں ایک فرد کی خدمت مانگنے اور ریاست کے اتحاد میں شامل ہونے کا معاملہ الگ ہے۔

پی ٹی آئی کے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ یمن کے مسئلے پر اتحاد میں شامل ہونے کیلیے پاکستان سے تقاضہ کیا گیاتھا،مسئلہ ایک فرد کا نہیں ریاست پاکستان کاہے اگرسابق جنرل راحیل شریف کو کمانڈ دی گئی ہے تو انھیں عزت دی گئی ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ یہ معمولی بات نہیں پارلیمنٹ سے مذاق کیا گیا قوم سے حقائق چھپائے گئے،پارلیمنٹ سے وعدہ کیا گیا تھا کہ کسی بھی فیصلے پر اعتماد میں لیا جائے گا،یمن کے تناظر میں اتحاد میں شمولیت سے متعلق پارلیمنٹ  میں معاملہ زیر بحث رہا۔

پاکستان پیپلز پارٹی کی رہنما شازیہ مری نے کہا کہ طارق فضل چودھری  اپنی پارٹی کو کہیں کہ یہ معاملہ پارلیمنٹ میں لائیں اگر حکومت پارلیمنٹ کا رخ نہیں کرے گی تو یہ بڑی غلطی ہوگی۔

شازیہ مری نے کہا کہ قوم کی رائے پارلیمنٹ سے لی جاتی ہے،چودھری نثار اپنی پارٹی کو کہیں کہ یہ معاملہ پارلیمنٹ میں لائیں۔

پی پی رہنما نے مزید کہا کہ حکومت نے پارلیمنٹ کی قرار داد میں تبدیلی کرنی ہے تو پارلیمنٹ میں بتائے،حکومت کی جانب سے پارلیمنٹ کے موقف کا مذاق اڑایا گیا،ہر معاملے کو الجھانا اس حکومت کی عادت بن چکی ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *