توہین رسالت پر سخت ترین اقدامات کریں گے،چوہدری نثار

توہین رسالت پر سخت ترین اقدامات کریں گے،چوہدری نثار

اسلام آباد:وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ مجھے خوشی ہے کہ ہم شہریوں کی سہولت کے لیے سینٹرز کھول رہے ہیں جہاں ڈومیسائل اسلحہ لائسنس کا اجرااور دیگرسہولتیں فراہم ہوں گی

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کے مطابق اسلام آباد میں شہریوں کے لیے سہولت سینٹرزکی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر داخلہ چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ پی ٹی اے کو ہدایت کی ہے کہ سروس پرووائیڈرز کو سختی سے ہدایات دی جائیں۔

سوشل میڈیا پر توہین آمیز مواد پر بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ناموس رسالتﷺہمارے ایمان کا حصہ ہے۔

چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ توہین رسالتﷺکرنیوالے دشمنان اسلام نہیں دشمنان انسانیت ہیں۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پی ٹی اے کو ہدایت کی ہے کہ سروس پرووائیڈرز کو سختی سے ہدایات دی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ میری ذمے داری ہے کہ کسی بے گناہ پر کوئی الزام نہ لگے۔

چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ توہین آمیز مواد عالمی مسئلہ بن گیا ہے ، قانونی مشاورت کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ مجھے بتایا گیاہے کہ بہت سارے بلاگز بلاک کردیے گئے ہیں۔

سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد کے بارے میں چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ گستاخی کے مرتکب افراد کو سزا دلانے میں آخری حد تک جائیں گے،ناموس رسالتﷺپر پوری قوم متحد ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکی حکومت سے بھی اس حوالے سے مدد مانگی گئی ہے جب کہ طارق فاطمی سے بھی اس حوالے سے مدد مانگی گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ تمام مسلمان ممالک سے یہ معاملہ اٹھے گا تو بہتر نتائج آئیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ طارق فاطمی سےکہا ہے کہ وہ مسلمان ملکوں سے رابطہ کریں۔

افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ یہ آزادی اظہار ہے یا ہماری مقدس ہستیوں کے خلاف گھٹیا ترین حرکت؟

انہوں نے کہا کہ توہین آمیز مواد سے متعلق سخت ترین اقدامات کو بھی تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جب سب مسلمان اکٹھے ہوکر بولیں گے تب غیرملکی کمپنیز کو صحیح پیغام جائے گا۔

چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ قوم سے اپیل ہے کہ جوش کے ساتھ ساتھ ہوش کو بھی ملحوظ خاطررکھیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ہولو کاسٹ سے متعلق شک کا اظہار کرنابھی جرم ہے۔

افتتاحی تقریب سے خطاب کے دوران ان کا کہنا تھا کہ ایف آئی اے کو لیگل کونسل کے لیے ہدایت جاری کردی ہیں۔ ہم چاہتے ہیں مسلمان ممالک توہین آمیز مواد کے معاملے میں ہمارا ساتھ دیں۔

اپنے خطاب میں چوہدری نثار سے انکشاف کیا کہ سوشل میڈیا پر یہ سلسلہ 2014 سے جاری ہے لیکن اب اس میں تیزی آئی ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *