سوشل میڈیا پرگستاخانہ مواد،چوہدری نثارعدالت طلب

سوشل میڈیا پرگستاخانہ مواد،چوہدری نثارعدالت طلب

اسلام آباد: سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر گستاخانہ مواد کی موجودگی سے متعلق کیس کے دوران اسلام آباد ہائی کورٹ نے وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثار کو کل بدھ کو ذاتی حیثیت میں عدالت میں طلب کر لیا ہے۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے یہ حکم مقدس ہستیوں کی شان میں سوشل میڈیا پر ہونے والی گستاخیوں کے خلاف دائر درخواست میں جاری کیا۔

جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے مقدس ہستیوں کی شان میں گستاخی کے معاملہ پر دائردرخواست کی سماعت کی جس میں ریمارکس دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ یہ معاملہ بیوروکریسی پر نہیں چھوڑا جاسکتا۔

ریمارکس دیتے ہوئے عدالت کا کہنا تھا کہ وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار ذاتی حیثیت میں پیش ہوکر بتائیں کہ اس اہم معاملے پر کیا اقدامات اٹھائے گئے ۔

یاد رہے عدالت نے سیکریٹری داخلہ واطلاعات اورڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے کو بھی عدالت میں پیش ہونے کا حکم جاری کیا،اس سے قبل آئی جی اسلام آباد اورچیئرمین پی ٹی اے بھی عدالت میں پیش ہوئے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے جج نے ایسے معاملات کے ذمہ داروں کو دہشت گرد قرار دیتے ہوئے کہا کہ روز محشر ہماری شفاعت کرنے والی ہستی کی کردار کشی کی جارہی ہے،میرے ماں باپ،جان،نوکری سب کچھ اللہ کے رسول ﷺ پر قربان۔

جسٹس شوکت عزیز صدیقی کا کہنا تھا کہ وزیر داخلہ عدالت میں پیش ہو کر بتائیں کہ حکومت کی جانب سے اس اہم ایشو پر اب تک کیا اقدامات اٹھائے گئے یہ معاملہ بیورکریسی پر نہیں چھوڑیں گے معاملے میں ملوث عناصر اور جو تماشہ دیکھتے رہے دونوں کے خلاف کاروائی ہوگی اگر گستاخانہ مواد نشر کرنے والوں کے خلاف کارروائی نہ ہوئی تو ملک میں امن و امان کا سنگین مسئلہ کھڑا ہو سکتا ہے۔ دوران سماعت آرڈر لکھواتے ہوئے جسٹس شوکت عزیز آبدیدہ ہو گئے۔

فاضل جج نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ مجھے تکنیکی امور میں نہیں پڑنا اس حساس معاملے میں پورا سوشل میڈیا بند کرنا پڑے تو کروں گا بھینسے،گینڈے،کتے یا سور سب بلاک ہونے چاہئیں اگر بلاک نہیں کرسکتے تو پی ٹی اے کو بند کردیں۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے جج کا کہنا تھا کہ  سوشل میڈیا کے بغیر پہلے بھی زندہ تھے لیکن کسی نے بھی ہماری محبت پر ایسا حملہ نہیں کیا،عدالت نے چیئرمین پی ٹی اے کو ہدایت کی کہ وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی کے ذمہ داران اس گھناؤنی سازش کے خلاف سخت ایکشن لیں۔

یاد رہے کہ پاکستان میں سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر درجنوں ایسے پیجز اور گروپس موجود ہیں جو ناصرف ملکی معاملات پر ہرطرح کے تبصرے کرتے ہیں بلکہ مسلمانوں کے لئے انتہائی حساس اور مقدس ہستیوں سے جڑے موضوعات کو بھی طعن و تشنیع کا نشانہ بناتے ہیں۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *