قرآن مجید کادعوی،مغربی ماہرین تصدیق پر مجبور

قرآن مجید کادعوی،مغربی ماہرین تصدیق پر مجبور

نیویارک: اللہ تعالی نے قرآن کریم میں انسانوں اور جنوں کو کھلا چیلنج دیا ہے کہ وہ اگر زمین کے کناروں سے نکل سکتے ہیں تو نکل کر دکھا دیں،یہ بات آج سے ساڑھے 14 سو سال پہلے بیان کی گئی ہے جبکہ سائنسدان آج اس بات کی تصدیق کرنے پر مجبور ہیں کہ زمین،سورج،چاند اور ستاروں کے ارد گرد موجود بلیک ہول سے کسی کا بھی نکلنا ممکن نہیں۔

ماہرین کائنات کے اسرارکو سمجھنے کی سرتوڑ کوشش کر رہے ہیں اور یہ موضوع ہے بھی اتنا دلچسپ کہ شاید ہی کوئی انسان ہو جواس کے بارے میں نہ جاننا چاہتا ہو۔

اس حوالے سے ماہرین نے ایونٹ ہورائزن ٹیلی اسکوپ نامی ایک ٹیلی اسکوپ جو پوری زمین کو ایک بار میں دکھانے کی صلاحیت رکھتی ہے تیار کی ہے  جس کا 5 سے 14 اپریل کو تجربہ کیا جائے گا اور اس سے دنیا کی تاریخ میں پہلی بار بلیک ہول کو دیکھا جائے گا۔

رپورٹ کے مطابق برج قوس اے کو آج سے پہلے کبھی نہیں دیکھا گیا مگر اس کے اثرات دیگر ستاروں پر دیکھے گئے ہیں۔

بلیک ہول جو کہ سورج سے بھی 20 ملین گنا زیادہ بڑا ہے کا پہلی بار مشاہدہ کیا جائے گا اور اس سے کشش ثقل کے متعلق اہم معلومات حاصل ہوں گی۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ  سپر میسو بلیک ہول جو سورج سے بھی بلینز گنا بڑا ہے ایک باونڈری ہے جس سے کسی کا بھی نکلنا ممکن نہیں ہے۔

پروجیکٹ لیڈر شیپرڈ ڈولیمن کا کہنا ہے کہ ہم دو دہائیوں سے بلیک ہول کو جاننے کی کوشش کر رہے ہیں،اب جا کر اس میں کامیابی کا امکان نظر آیا ہے اور ہم 5 سے 14 اپریل کے درمیان اس کا تجربہ کرے جا رہے ہیں۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *