میاں صاحب اور پاناما کیس! بلاول نے حکومت کے پرخچے اُڑا دیے

میاں صاحب اور پاناما کیس! بلاول نے حکومت کے پرخچے اُڑا دیے

فیصل آباد:پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے حکومت کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ آپ کس  ترقی کی بات کررہے ہیں ،کسان خودکشیاں کر رہے ہیں،اپنی فصلیں جلارہے ہیں،میاں صاحب آپ کیسے والد ہیں خود کو بچانے  کیلیے بچوں کو آگے کررہے ہیں۔

پاکستان ٹرائب کو دستیاب اطلاعات کے مطابق پی پی پی سربراہ فیصل آباد میں ریلی سے خطاب کر رہے تھے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ اپنی دھرتی کے لیے ہم جانوں کے نذرا نے پیش کردیتے ہیں یہی فرق ہے آپ کے اور ہمارے عمل میں۔

پی پی پی  چیئرمین نے کہا کہ شوبازیاں کرنے والا اب وزیراعظم بننے کے خواب دیکھ رہا ہے جو صرف شوبازیاں کرتے ہیں اس  کی صرف آنیاں جانیاں ہیں۔

حکومت کو اپنی چار شرائط یاد کرواتے ہوئے بلاول نے کہا کہ اپوزیشن کا بل منظور کرلیں،بل کے بغیر اِس کا کچھ نہیں ہونا آپ ہمیں جیلوں میں بند کرتے رہے اور خود سرمایہ باہر بھجواتے رہے میاں صاحب آپ ہم پر مقدمات اور خود آف شور کمپنیاں بناتے رہے۔

بلاول نے کہا کہ میں کہتا رہا مستقل وزیر خارجہ لگایا جائے،پاناما لیکس کی صاف اور شفاف انکوائری کی جائے،ہمارا مطالبہ تھا کہ واضح اور حقیقی قومی خارجہ پالیسی اور وزیرخارجہ بنایا جائے۔

پی پی پی سربراہ نے کہا کہ آپ کی ذاتی تعلقات والی خارجہ پالیسی نہیں چل سکتی پاکستان کو عالمی سطح پر بہت بڑے چیلنجز کا سامنا ہے۔

ن لیگ کی پالیسیوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے بلاول نے کہا کہ آپ  عوام کو غریب بنا کراپنا کاروبار چمکا رہے ہیں فنانس منسٹر کہتا ہے دال مہنگی ہے تو مرغی کھالو،کیپٹل ٹیکس غریبوں سےلیاجارہاہے،نوجوانوں کو روزگار نہیں مل رہا۔

بلاول نے کہا کہ شریفوں کی ملوں میں ترقی ہورہی ہے،مزدوروں کو مزدوری نہیں مل رہی پاناما اکاؤنٹس میں ترقی ہورہی ہے،کسان کو فصل کی قیمت نہیں مل رہی۔

جوشیلے بلاول نے کہا کہ میاں صاحب آپ نے پرائیویٹائزیشن کے نام پر ملک پرظلم کیا بینک دوستوں کو دیا،شوگرمل رشتے داروں کودی۔

یاد رہے کہ بلاول بھٹو زرداری نے جمعرات کو اپنی پہلی سیاسی ریلی کا آغاز کیا جس کے بعد فوری طور ن لیگ میں بھی افراتفری پھیل گئی ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *