پاناما کیس میں مین آف دی میچ کون؟شیخ رشید کے دلچسپ دلائل جاری

پاناما کیس میں مین آف دی میچ کون؟شیخ رشید کے دلچسپ دلائل جاری

اسلام آباد:سپریم کورٹ میں پاناما لیکس کیس کی سماعت کے دوران دلائل دیتے ہوئے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ کیس میں قطری شہزادہ مین آف دی میچ ہے۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کے مطابق عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کے دلائل کے دوران سپریم کورٹ میں قہقہے گونجتے رہے۔ اپنا موقف بیان کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ قطری شہزادے کا خط رضیہ بٹ کا ناول ہے اور نواز شریف کے لیے ریسکیو 1122 ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ میں نعیم بخاری کے دلائل کی مکمل تائید کرتا ہوں۔ ایک طرف مریم کہتی ہے کہ ان کی آمدن نہیں اور دوسری طرف مریم نواز امیر ترین خاتون ہیں۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ یہ مقدمہ 20 کروڑ عوام کا ہے اورآپ نے انصاف فراہم کرنے کا حلف لیا ہے،عوام کی نظریں عدالت پر ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ عدالت سب کچھ جانتی ہے ہم صرف معاونت کے لیے آتے ہیں۔ شیخ رشید کا کہنا تھا کہ اگر کوئی کسی کہ زیر سایہ ہے تو زیر کفالت کہلائے گا۔

اپنے دلائل دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف پاناما کیس میں براہ راست ملوث ہیں۔ انہوں نے دو افراد کو زیر کفالت ظاہر کیا اور وہ دو لوگ ان کی اہلیہ اور مریم نواز ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اسحاق ڈار نے اربوں روپے دبئی منتقل کرنے کا اعتراف کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ قطری خط بیان حلفی کے بغیر ہے قانون کے مطابق زبانی ثبوت براہ راست ہونا چاہیے اور سنی سنائی بات کوئی ثبوت نہیں ہوتا۔

سربراہ عوامی لیگ کا کہنا تھا کہ قطری خط سنی سنائی باتوں پر مبنی ہے اور اس  کی حیثیت ٹشو پیپر سے زیادہ نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کیس کے پیچھے اصل چہرہ سیف الرحمان کا ہے اور ایل این جی کا ٹھیکہ بھی سید الرحمان کو دیا گیا۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *